Friday Sermon (Urdu) – 3-09-2021 – Syed Taalay Ahmad




Friday Sermon (Urdu) – 3-09-2021 – Syed Taalay Ahmad

خطبہ جمعہ خلیفۃ المسیح الخامس مرزا مسرور احمد ایدہ اللہ ۔ سید طالع احمد ۔ ارادوں کا پکہ انسان

Streamed Live on 3 September 2021

ماشاءاللہ الغالی مولانا محمد شریف واشکروا نعمہ محمد دور رسول اللہ سال بعد فاعوذ باللہ من الشیطٰن الرجیم بسم اللہ الرحمن الرحیم اھدنا الصراط المستقیم صراط الذین انعمت علیہم غیر المغضوب علیہم ہمارے بہت ہی پیارے بچے کی زندگی اکبر انا للہ وانا الیہ راجعون 24 میرے گھر کے کام سے آ رہی تھی محمد عمر فاروق چار گھنٹے کے بعد پہلے انکی تھے راستے میں سید علی احمد کی وفات ہوگئی شاید آئی ایم ٹی اے انٹرنیشنل نیشنل دوسرے ملکوں میں تشدد سے آتے ہیں لیکن یہاں پر تھی اور مہینوں کے کی میرے ساتھ دہشت گردی شاہ محمد د محمد نواز رضوی صاحب کے پڑنواسے اس طرح ڈاکٹر میر محمد اسماعیل صاحب کے کے پودے کے پتے کے بیٹے تھے تھے اور امی جان جان جان صاحب کے چھوٹے بھائی تھے اس لیے ہم نے اس سے فرمایا انسان کا سلسلہ ملتا ہے مضمون اسلام سے بھی اور رمضان سحری کا رشتہ قائم ہوتا ہے اسی طرح القدس شریف کے داماد بھی تھے اللہ تعالی کے فضل سے تھے جیسا کہ میں نے کہا میں بھی شامل تھے بائیو میٹرک کے سپلیمنٹری اصل کی کی جھلکیاں کیا 2013 میں اور میڈیا میں پہلے پہلے اپنی جماعت میں 16 مئی سے نیوز نے ہیںمکمل طور پر پر اور اور اس سے پہلے یہ میں ہے جنہوں نے اور مزید تین یا چار منٹ پر کام کر رہے تھے پروگرام پروگرام جو ہے مصروفیات کا تخلیق کیا تو انہوں نے شروع کیا اور پھر آخر تک اس میں خاص دلچسپی سے اس کا کام کرتے رہے اس کے علاوہ خدام الاحمدیہ کے شعبہ جات میں سے زیادہ تر ہے مختلف جماعتیں رسائل فی المہدیین ہے اور میڈیا کے ہوسکتا ہے مسلم ممالک میں میرے ساتھ کی ہوئی سبزی کو کو نکاح کو ختم کرنے کے لیے اور صرف ختم کرنے کے لئے نہیں نہیں بلکہ معیار کے مطابق پہنچانے کے لیے غیر معمولی ملی نغمہ ملی جوش و جذبہ ہوتا اور اس کے لیے وہ کسی خطرے کی پروا نہیں کرتے اور اس کی شہادت کا واقعہ بھی ظاہر ہوتا ہے ہے ان کو ایک لمحے کی فکر نہیں تھی کہ کیا خطرہ ہے ہے بس یہی کرتی تھی جس کام کے لئے آیا ہوں ہو اس کو انجام دے سکوں اور وقت پر عمل کر لو لو ایسے وقت میں سفر شروع کیا جبکہ خطرے کے امکانات بہت بڑھ گئے تھے تے ابوبکر ابراہیم صاحب کے وہ کہتے ہیں بتاتے ہوئے کچھ ایسے دس بجے کی ٹیم سے باہر ہونے لگی تو انہوں نے تالے اس کو اپنا سامان پیک کرتے تھے کہ کا ووٹ لسٹ چیک اپ کر رہے ہو ہو کے واپس آنا ہے اور اپنا بھی ہے یا لینے کا موقع ملا اس لیے میں نے واپس جانا ہے کہ آپ مناسب نہیں ہے یہ بھی کہا کہ میں نے کہا کے چلی جانا ہے اور میرے پاس تو دینا ہے اور بہت سارے کام یا کو وسیع کرنے والے ہیں اس لیے نہیں جانا ضروری ہے کیا کہ واپسی کا سفر کرنا ہے ہے کسی کے لئے لیے سات بجے صاحب کے نماز پڑھتے ہیں نمازیں ادا کی ان کو فکر کی ریکارڈنگ بھی فائدہ نہیں ہیں جو کلائیوں سے چوڑیاں قوالی میں کیا 10 میں میں اس پر بحث کرنے کے لئے کوشش شروع کر دی انہوں نے اور کوئی کام کر رہے تھے تھے اور ان کو برداشت کے آیا ہوں اور یہ بھی تھی کہ جماعتیں سامان جو ہے ہے وہ بھی نہیں اس کی فکر رہتی تھی ان کو پکڑنے کا سامان رہا ہے بہرحال کہتے ہیں پولیس رپورٹ کے مطابقگلشن قریشی ڈاکومنٹری شروع کردی جس کے نتیجے میں ٹیم کے دو افراد زخمی ہوگئے ہیں اسے بتایا نہیں رائیونڈ کہتے ہیں کہ گاڑی سامنے آرہی ہے مجھے خطرے کا اشارہ کیا جس کو میں سمجھ نہیں پایا یا میں نے دیکھا فائرنگ کے دوران مجھے گلے میں ٹانگ کے اوپر ان کے اوپر گولی لگی اس کا مجھے احساس نہیں ہوگا گولیاں برسانے کی بقا کی طرف سے خاموشی ہوگی اور یہ لوگ پھر رہے ہیں کہ تھوڑی دیر کے بعد خدا کو ٹارچر آگے بڑھے اور ڈرائیور گاڑی سے اترا اور ہمارے پاس پھونکنے کو کیا ہے ان کے حوالے کر دیا آپ نے نے عبدالرحمان اور برائیوں سے وہ کہتے ہیں سب کچھ ہو گئے ڈاکٹر چلے گا میں لوٹ گئے تو ہمت کر کے اٹھے اور گاڑی کی طرف آئیے دیکھئے تعلق کا کیا حال ہے ہے تو دیکھا اس پر گولی لگی تھی اور دائیں طرف اور اس کے نتیجے میں گاڑی میں بیٹھ گیا تھا جی جان لیوا بھی ثابت ہوا اور حال کے گیا وہاں پر جانے کا فیصلہ ہوگا میں ہے یہ کہتے ہیں کہ سر پہ تھا تھا ہے کہتے ہیں ہمارے پاس ہونے کا شدید احساس تھا اور بے شمار اندیشے اور خوف خواب تھے تھے جو محفوظ کر رہے تھے صحیح کہتے ہیں اس دوران میں جو ملکی تجارت بھی بتایا نہیں کہ فائرنگ کے فوری طور پر لیپ ٹاپ کے نیچے دھکیل دیا ہے سے نکال لینا پھر انہوں نے مجھ سے کیا مراد ہے اس کے بارے میں پوچھا ہے کیونکہ انہیں فکر تھی ریکارڈ نہ رہے تھے تھی اسے اشعار حول کی اور جو محنت کی تھی جماعتی تاریخ محفوظ کرنے کی اس کی حفاظت کی ہیں کہ نو بجے ایک بلکہ شروعسوزوکی سفر کر رہے تھے تالے نے مجھ سے کہا کہ حضور تو پھر یہی دور تھے اور ایسا کوئی محبوب ہوگا ایک دفعہ انہوں نے یہ بھی کہا ہاں کہ آپ لوگوں نے بہت زیادہ خیال رکھا ہے اور ہر ممکن مدد کی ہے جس میں آپ کو تہہ دل سے مشکور ہوں میں نے ان کے حوصلے بلند کیا لیکن ان کی حالت ٹھیک ہے تیزی آئی ہے اور میں سمجھ گیا کے ہم نہیں چاہتے وہ ہو گیا ہے ہے اور آپ لوگ زبان میں باتیں کر رہے تھے جسے منزل مجھے اندازہ ہو رہا تھا کہ ہم کو بتانا نہیں چاہتے لیکن یہ تعلیمات کی خواہش کی ہے اس میں دفن ہوا کی وجہ سے سبزیوں سے اٹھ کے لوگ ہو تو تھوڑی دیر پہلے ہی حال تو اس کی شہادت کے واقعے کی تفصیل تھی یہی رہا تھا داتا سے جدا ہوگیا یا اللہ تعالی ایسے وفعات عاطف اخلاص وفا کا تعلق رکھنے والے والے اور دین و دنیا کو دور رکھنے والے جماعت فرماتا ہے ہے لیکن اس کا نقصان ایسا ہے ہے اس نے علاقے کی ہے ہے اور اس عہد کو حقیقی رنگ نبھانے والا تھا جو اس نے کیا تھا مجھے حیرت ہوتی تھی تھی اسے دیکھ کر اور اب تک ہوتی ہے ہے کہ کس طرح میں پلنے والے بچے نے نے اپنے وقت کو سمجھا جا اور پھر اسے نہ پایا آیا اور ایسا نہیں آیا یا معیار یار کو انتہا تک پہنچ جاتی ہے ہے وہ پڑھتا تھا اس لیے نہیں نہیں کہ تاریخ سے آگاہی حاصل کریں کرے اور ان کی قربانیوں پر فخر کا اظہار کرے کرے بلکہ اس لیے لئے کہ اسے اپنی زندگی کا حصہ بنایا ہے ہے خلافت سے وفا اخلاص کا احساسات تھا داتا نے میں آتا ہے ہے میں کہوں گا کہ ایسا تھا تھا جس کے بعد نکاح نہ رکھنے والی بھی نہیں سمجھتے بادشاہ ایسے لوگوں کا علم علم کی پیدا کرتا ہے ہے بلکہ میں کہوں گا سمجھتے تے ہیں اس نے خلافت سے وفاقی ٹی اور ایسی وفاقی کی کہ اپنی آخری الفاظ میں جب کہ وہ موت و حیات کی حالت میں تھا اسے خلیفہ وقت سے پیار اور وفا کا خیال تھا اپنے بچوں اور اپنی فیملی کا خیال آتا ہے ہے لیکن ہر دفعہ بار بار اپنے بچوں سے شادی سے پہلے یہ ساتھ خلیفہ وقت سے پیار کا شاعر کسی خیال آتا ہوں شاید دو تین سال پہلے ہی اس نے لکھی تھیاور کسی کو نہیں دیکھا جو خلافت سے تعلق اور پیار سے متعلق لکھی گئی یتیموں شروع ہوئی اس طرح کیا تھا کہ مخلوق میں سب سے زیادہ پیار کرتا ہوں ہو اور ختم اس طرح کیا تھا تھا ہے وہ ایک بھی پتہ نہیں چلے گی ید بیضا داری میں تمہیں بتاتا ہوں ہو کہ تمہارے الفاظ سے پہلے بھی مجھے پتا تھا کہ تمہیں میں خلافت سے پیار اور محبت کا تعلق تھا کتا اے حامل سے سے حرکت و سکون سے سے جو تمہارے ہاتھ میں تھا اور میں ہوتا تب بھی اور جب کہ ان کے علاوہ ملتے تھے مجھے ذاتی ملاقات وہ زیادہ تر کام سے سے تمہاری آنکھوں کی چمک سے سے اس محبت کا اظہار ہوتا تمہارے چہرے کی ایک عجیب قسم کی رعایت سے سے اس محبت کا اظہار ہوتا ہے یہ لگ رہا ہے کہ محبت کا اظہار کرو جو تمہیں ہے ہے مجھے شاید ہی کسی نے اس محبت کا اظہار نظر آتا ہوں ہو اور گھر میں ذکر کر رہا تھا تھا کہ خاندان میں نوجوانوں میں میں تو مجھے ایسے گزار کر کسی میں نہیں کرتا دلوں کا حال اللہ جانتا ہے اور کپڑوں میں پیش آیا یا چند ایک میں ہی ہوں ہو میری دعا ہے کہ اللہ تعالی اس حادثے کے بعد بہت سے اس معیار کے پیدا کرتے ہیں ہیں ہیں ہیں تارے کا وجود تھا اس نے ذکر کیا ہے ہے اس محبت کا اظہار نہیں کرنا چاہتا ہوں نا چاہتا ہوں لیکن ہی شوق تھا تھا لیکن کسی رنگ میں اس کا اظہار پر واضح تھا اس کا اس لیے مجھے بہت پیارا تھا ہر وقت فکر میں رہتا تھا سے بھی بات نکلے اور میں اس پر عمل کرو اور پھر خود ہی عمل نہ کرو ملکہ کب اور کس طرح سورہ اخلاص عورت کے مقام کے بارے میں دنیا کو بتاؤ او خلاف اس کے لئے جان کی قربانی دینی پڑے تو جان کا نذرانہ پیش کر پھر اپنے کام سے ایسا عشق عشق کم کم ہی دیکھیں گے آپ پھر اس لیے ہی کام سے آیا تھا کہ اپنے کام کو پسند کرتا تھا اور لوگوں سے ہی پسند کرتے ہیں ہیں ہے اس پر لگا ہوا تھا تھا اس لیے اس سے اسلام اور حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کے دین کا دفاع کروں گا اس لئے کہ پیغام میں دنیا کو پہنچ جاؤں گا اس لئے کہ میرا کام ہے کہ حضور علیہ الصلوٰۃ والسلام کے پیغام کو دنیا کے کنارے تک پہنچا ہوں اس لیے کہ میں نے اس وقت مزار بنا ہے ہے تقریر مسیرا وے کی تقسیم کے وقت وقت قبر کے سرہانے کھڑا تھا میں ڈالنے سے پہلے دائیں طرف کھڑا ہوگیا یا میں نہیں جانتا تھا کہ کون کھڑا ہے ہے اب تصویر دیکھے سے مجھے اندازہ ہوا کہ کون تھا تھا میں نے عرض کیا تھا تو ہو اور آپ بہ نے تو بعد میں اپنی تعلیم مکمل کرکے اس عہد کو پورا کیا اور فرمایا یا رب میں آیاعلی ابن ابی طالب مکمل کی کی اور شہید ہو کر بتا گیا یا کہ میں خلافت کی مزار بنانا او رے پیا رے میں گواہی دیتا ہوں کہ وہ ایسا کر دیا ہے کس کس طرح اس طرح کے الفاظ پر عمل کرنے کی کوشش کرتا تھا اس وجہ سے میٹنگ میں میں بھی ان کے ساتھ تھی انہوں نے کہا کہ مرضی ان کو کوشش کرنی چاہیے کہ ایک گھنٹے کی جدوجہد پڑھا کریں نے میں نے بات بیان کی طرح یہ سوال نہیں کیا یا گرمیوں کی چھٹیاں تو میں کس طرح اتنی جلدی جا کر ایک گھنٹے کے بعد پڑھ سکتے ہیں بلکہ اس میں عمل کرنے کی کوشش کی اس کے دوستوں نے نے ایک دن اس سے بڑا تھکا ہوا دیکھا تو وجہ پوچھی تو اس نے بتایا کیا کہ خلیفہ وقت نے مغربی ان کو ایک گھنٹے تک انتظار کرنے کا کہا ہے ہے میں بھی تو کہو دیکھو میرے لیے بھی ہے ہے آج اس کی وجہ سے پولیس کا قابل نہیں ہے ہے اس میں میں نے لکھا اس کی اس بات نے مجھے سب سے زیادہ کیا کیا کہ میں براہ راست مخاطب تھا صاحب اور میں نے خلیفہ وقت کی بات پر عمل نہیں کیا کیا اور اس نے اپنے والد کو اپنی زندگی کے ابتدائی زمانے کے لیے اس پر عمل کیجئے معیار یار رکھنے کے لیے بھی کوئی کام نہ تھا اور خاندان حضرت موسی علیہ السلام کا فرد ہونے کی حیثیت سے خاندان کے افراد کے لیے بھی وفا اخلاص 19 افراد خاندان پر منحصر ہے کہ کس حد تک اس پر عمل کرکے حضرت نوح علیہ السلام سے منسوب ہونے کا حق ادا کرتے ہیں ہیں اگر کوئی عزت کرتا ہے ہے تو ان کی دنیا داری کی وجہ سے نہیں ہیں اور نہ کبھی ہوگی یتسم ہے ہے کہ دین کے خادم ہیں اور دین کو دنیا پر حکومت کرنے والے ہیں ورنہ نہ دنیا داروں میں تو کروڑوں لوگ اس سے بہتر یہی ہے اور یہ بھی لحاظ سے بہتر نہیں ابھی ان کی کوئی ضرورت نہیں ہے ہے خاندان کے افراد سے بھی کہتا ہوں ہو کہ جانے والے سے نصیحت حاصل کریں کریں اور اخلاص و وفا میں اور جس طرح کے ہیں اپنی دنیا اور دین کو دنیا کو دھمکیاں یا باقی افراد خاندان بھی اس کو دیکھے اور یہی چیز جیز عزت دلانے والی ہے اور خدا تعالیٰ کے فضل کو حاصل کرنے والی ہے ہے اور دنیا داری اور دنیاوی خواہشات شہادت خاندان کو معمولی چیز نہیں چلاسکتیں بیٹا ہونا یا کسی کی بیٹی ہونا کوئی اور کام نہیں ہے اگر آپ نے ہی نہیں ہیں جیسا کہ آنے کا کے لیے بھی حیرت انگیز تھا کرتا ہوں اگر کہیں سے کوئی فائدہ نہیں جاتی شکرگزاری کے جذبات سے لبریز تھا اللہ تعالی سے دعا کی کہ اللہ تعالی مجھے تنگ نہ دینا اور پھر اللہ تعالی نے بھی کوئی تنگی نہ رکھنے والا بے شمار خوبیاں بعض لوگ جو خط لکھ رہے ہیںعلی بھی حیرت انگیز ہیں میں اس کی خود کچھ تک جانتا تھا تھا لیکن اس کی نیکی اور تقویٰ کے معیار بہت اچھے اس لئے مناسب ہے ہے کہ اس کے بارے میں لوگوں کے الفاظ میں یہی باتیں آپ کے سامنے رکھ دوں جس میں ان کی بیوی اور والدین اور بھائیوں اور دوستوں کے ساتھ ہیں اور باقاعدہ اور واقعات پھر کہتے ہیں چار سال تک علی نے بھی اس میں کام کیا کیا ہوا بھائی بہت بڑی ذمہ داری تھی انجام دی ہیں جن کے سو سال سے زیادہ عرصے کا اختیار کرنا مختلف کیٹیگریز کی فہرست تیار کرنا الگ موضوعات پر مضامین کو ترتیب دینا توسیع کا امکان ہے اور لگن سے کام کیا کیا مالک تھے ہم ان کے تھے یہ ہے کہ کسی پراجیکٹ کو شروع کرکے ایک جذبے اور شوق کے ساتھ قابل خوشیاں مناتے کبھی اس بات کا انکار نہیں کرتے کہ کوئی الزام نہیں کام کرنے کی ترغیب دے یا نہیں آتا نہیں کروائے گا آگے بڑھ کے کام کرتے ہیں ان لوگوں میں سے تھے ان کے بارے میں فرمایا کہ وہ جنون کی حد تک ایک اور اخلاص کے جذبے سے دین کا کام کرتے ہیں اس کی پرواہ نہیں تھی جب بھی جماعت اور خلافت کرنے کی توفیق ملتی صحیح ہے کھلی کی کھلی رہ جاتی ہیں جیسے کوئی بچہ کہنے کی طرف دیکھتا ہے اور پھر آپ کی ہدایت پہنچانے کے لیے میرا شکریہ ادا کرتا پھر کہتے ہیں ڈاکومنٹری جائے تو ڈاکومنٹری پر کام کرتا اور میں بہت حیران ہوتا تھا کہ دو ڈاکومنٹری پرست کس نے کام کرلیتا ہے نہیں ہوتا ہے اس ڈاکومنٹری کا کام کر رہے ہیں دینا چاہتا تھا کرنے کی صلاحیت اور جماع کرتے دیکھنا چاہتا تھا جب میں اسے بتاتا ہے کہ رشتہ داریوں سلسلے میں خدمت کی ہے رہا ہے بہت خوش ہوں اردو صاحب کہتے ہیں کہ بچپن سے ہی میرا اس کے ساتھ تعلق تھا کہ تم نے مشاہدہ کیا ہے ہے کہ پہلے ہے میری بیٹی نشان لگائے اس کی سب سے بڑی تھی اور مختلف آیات ہائی لائیٹر لگائیں آئی وانٹ کی تصویر بھی نہیں بتاتا ہوں وہ بھی اس نے پڑھی ہے اس نے گروپ میں ایسی کرنے کے بعد میں نے کہا تھا اور پھر اس کے بعد پیچھے دفتر میں ملاقات میں کہا کہ اس کو بھی میرا خیال تھا کہ چار سال لگائے گا لیکن پھر بھی مجھے اس کو بھی اسی طرح وہ ایسی ڈاکومنٹری نوجوانوں کو پسند ہو وہ سافٹ ویئر کے بارے میں ڈاکو منٹری بنائی جس میں تربیتی پہلو کو مدنظر رکھا ہے پھر کہتے ہیں کہ ایم پی اے کو پروڈیوس کردہ ڈاکومنٹری ایک بار کے ہے ہے جس ٹائم ہوا تو پاکستان نے طالبان کو میسج بھیجا کے قریب ہیںاعتراض کیا تو نے اس کا جواب دیا اس میں کہتے ہیں کیونکہ یہ نام میں نے کوشش کی ہے اگر آپ کو میری طرف سے یہ نام ہوتا تو میں کبھی کچھ نہ کہا تھا لیکن آپ نے منظور کروائی ہے اس لیے میں نے دوبارہ اس کا متضاد کرنی ہے کال پر اپنے عہد وفا all eposide22 کچھ آپ کے ساتھ ہی پیش کریں اور اس کے ساتھ اتحاد نہیں ہوا کہ اس میں اسے کا کا راضی ہو گیا یا رب ارحم واقعہ لوگوں کو پسند آئے تو کیا کیا اس نے پھر میسج کیا اس کو سزا نہیں دیا کرو کہ میرا ارادہ تھا کہ جب میری اصلاح میری اصلاح ہو جائے تو کونسی دعا پڑھے اس وقت تک میرا خیال تھا میرے ساتھ ابھی اس کو پسند کرتا تھا تھا یا یا بنی ہو گی تو میں سوچتی تھی کہ کتنی محبت ہے ڈرامہ بچوں کی طرح ہوتا ہے جو اس طرح کی بات کرتا تھا اطلاعات کو بھی اخلاص کے بارے میں کہانیاں سناتا تو اس کی لے کر روتا تھا آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے بارے میں بہت کہانیاں پتہ تھی واقعات ہے دل چاہتا ہوں کہ میرے پیچھے چھوڑتے جاؤ حافظ محبت بھی بہت تھی اور غیر بھی چیز کی کی لیکن اس کے بعد دیتی ہے کہتی ہیں اتنا خوش ہوتا ہے اس کو لگتا تھا کہ آپ خوشی سے یا اس کے بیٹے سے خوش ہیں ہمیشہ ملاقات کے بعد ریٹ کیا کرتا تھا یا لیتا تھا بڑے اچھے بچے بن کے تمنا ہے ہم نے ایک ہوتا تھا اس کے سامنے آج تم نے بہت اچھا ہے اور ہماری ملاقات کی ہے یہی وفا کی ہے یہ خیال ہوتا ہوگا مجھے نہیں کریں گے وہ وہ تو کہتے ہیں کہ مجھے یاد ہے کہ جب کبھی یہ خیالبالکل غیر مادی پسند تھا کبھی اس نے اتنی سی خواہش نہیں کی اس نے کبھی کسی کے دل میں کبھی مٹیریل چیزوں کے لئے لالچ نہیں تھی کبھی اس کو دنیا کی چیزوں میں دلچسپی نہیں تھی اس کو مہنگا تحفہ دیتا تو کہا جاتا تھا کہ میرے پاس کوئی ایسی چیز ہے جو کرتا ہوں اللہ کا جو بھی اس کو دیا ہے اور جو کچھ اس کے پاس آیا تھا بچپن میں خلیفہ اوّل رضی اللہ عنہ کا ایک واقعہ پڑھا تھا کہ ان کے ساتھ مالی معاملات میں کیسا سب کو عطا فرمائے کہتا تھا کہ میں نے فورا پڑھ کر اللہ سے دعا کی کہ اللہ تعالی مجھے بھی اسی طرح سیٹ کرنا ہے اور اس کو پکا یقین تھا کہ اللہ تعالی نے میری دعا قبول کرلی ہے اور ہمیشہ میرے ساتھ اللہ تعالی کا قیام الدین صاحب کی طرح کا سلوک ہوگا اور یہ واقعی سچ کہتی ہے یہ خود دیکھا ہے کہ جانے اس کے پاس پیسے آ جاتے تھے جب کسی چیز کی ضرورت ہوتی تھی ابھی حال ہی میں دیکھ لو ان کمپنی نے اس کو فون کیا کہ ہمارے پاس تمہارا ایک ہزار کا نوٹ ہے اس کی بھی کر سکتا ہوں اور گاڑی کی میٹنگ کی ضرورت پوری کر سکتا ہوں یا نہیں اللہ تعالی سے اس کا پیار کس نے خود دیکھا ہے کہ محسوس ہوتا تھا اس نے میرے پاس پیسے نہیں تھے بلکل ختم ہوگئے سے میں نے نماز پڑھی تھا ہے کہ لوگ میں نے کہا کہ لوگ عشق کرتے ہیں ہیں پیاری ہے اللہ تعالی میرے لئے رویا کرے گا اس لئے مجھے بلاوجہ دنیا میں پیپلز پارٹی کو اپنے گا پھر یہ کہتے ہیں کہ ہم پہلے کرائے کے گھر میں تھے اور ہماری ایجنسیاں سپریم کونسل da4ama میں میں نے لکھا کہ تمہارے اکاؤنٹ میں زیادہ پیسے دو سو ہے فون جماعت کو اس نے کہا میں واپس کروں گا ان کی جماعت نے کبھی نہیں کہا تھا کہ اس طرح کی فالو کریں اور پیسے واپس کرو لیکن اس نے کیا کرنے ہیں اور کچھ نہیں بنا ہوا کرتا تھا کہ ہو سکتا تو اس وقت نہیں کرتا اور کبھی اس کو پسند ہے جماعتوں نے اس سے کوئی چیز کی میں بھی اس کو یہ فکر تھی کہ جماعت اسلامی کا سامان لے کر رہا ہوں اپنا خیال رکھوں گا اور اپنی کوئی ضرورت نہیں ہے اس کو مہمان نواز بہت تھا اپنی فیملی کو میری فیملی کو ہمیشہ خیال رکھا کرتا تھا سادہ کپڑے مشہور تھے تھے کہتے ہیں کہ مجھے لگتا ہے کہ بعض لوگ اس کو مسترد کرتے تھے یا سمجھتے تھے کہ شاید وہ اس میں تکبر ہے یا وہ پھٹ ہے تھا وہ پیار سے ایسی باتیں کرتا تھا بہت معاف کرنے والا تھا پھر کسی کی پردہ پوشی کرتا تھا اور کبھی کسی خلاف دل نہیں رکھتا ان کی والد کہتے ہیں ہیں کہ اللہ تعالی نے بیٹے کو خاص والوں کے ساتھ چلتی چلتی ہے خواب کی بنا پر طور پر اپنی بیوی کو طلاق کا اختیار کرنا شروع کیامیرا خیال ہے کسی وجہ سے یہ دعا کی ہوگی کہ باپ کی شادی کی جائے اس سے شادی کر چلے اور کیونکہ وہ اس مقام کا تھا کہ اللہ تعالی سے شہر کو ترقی دے اللہ تعالی عنہ کی شہادت دی zee1 ہاتھ آ رہا ہے میں جانتا ہوں یا مر جاؤں کر لیا بچپن سے کہتے ہیں کہ بچپن سے لے کر دیا تھا خاندان میں پیدا کر دیا ہے اب اس کو بھی سمجھنا اور اس ذمہ داری کو نبھانا اور جان لو کہ تمہاری زندگی کی تمہاری نہیں ہے یہ میری اور صرف میرے اوپر چڑھ کے کے نہیں ہے میں نے اپنی زندگی میں کیا کہتے ہیں ہیں کہ میں کوٹ کوٹ کر اللہ تعالی نے اپنی محبت اپنے پیار کی جادو بھری ہوئی تھی ایک ایسا دل تھا کہ بچپن سے ہی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر اس کا وزن رکھتے تھے اور آنکھوں میں آنسو آ جاتے ہیں ایک پاکباز نفس میں کسی برائی کا شائبہ بھی نہیں تھا ظاہری باتیں خصوصیت تھی اور مشابہت دینی ہے تو کہتے ہیں میں کہتا ہوں کردار میں اس قدر پختہ تھا اس کی روح کی گلیوں میں پھرتی تھی اس کا جسم تھا اس کا اوڑھنا بچھونا کھانا پینا سب کے لئے تھا ان کی والدہ اور صاحب لکھتے ہیں کہ بہت خوش قسمت وقت خوش نصیب ہو کہ اللہ تعالی نے مجھے ایک عظیم الشان 25 سے نوازا تعلیم کے ساتھ اکتیس سالہ زندگی کے ساتھ 31 سالہ زندگی دنیا کی سب سے بڑی نعمتوں میں سے ایک ہے ہے پھر میں کسی خاتون کی خاطر کیا ہے تو دیکھا کہ اس کے ہاتھ پکڑ سے باہر آرہے ہیں اور کہتی ہے کہ انہوں نے بچے کو اسلام علیکم اور میں ایسا تھا کہتے ہیں دونوں جب یہ ان کا 2005 میں رکھی تھی تھا کہ تین سال کی عمر میں اس نے قرآن کریم کی کس سورۃ میں یاد کر رہی تھی والدہ کو بتایا تو بڑی حیران ہوئی پھر کہتی ہیں مجھے یاد ہے کہ تین سال کی عمر میں ہی باتیں اسے شیئر کیا کرتی تھی اور میرے ساتھ ہے انیس 2019 میں اس نے اوپر جس میں آٹھ پروگراموں کے بارے میں قرآن بھیجا da5 ہو جائے تو اس پروگرام کو مکمل کر لینا تھا اس دھرتی ہیںبات کو بھی آدھی رات کے بعد کھانا کھانا کھانا پھر کام پر لگ جانا چوٹی کے دن بھی اس کے لیے کی کوئی چھوٹی نہیں ہوتی تھی جب تک جماعت کا ہفتہ نہ ہو جائے ہمیشہ بہت جوش و جذبے سے جماعت میں مصروفیت پر فارغ وقت میں ڈاکومنٹری اور ویڈیو دیکھتے ہی دیکھتے رہ تو میں نے کبھی کسی کو کسی پروگرام کو اتنی گہرائی میں دیکھتے اور تجزیہ کرتے نہیں دیکھا جیسے کوئی مطالعہ کر رہا ہے پوچھنے پر کہتا کہ اپنے اندر میں نمایاں کامیابی حاصل کرنے کے لئے بہت ساری دستاویزی فلموں اور ویڈیو کا مطالعہ کرنا پڑتا ہے ہے جماعت کے لیے مواد تیار کرکے اور معیاری کی ڈاکومنٹری تیار کرنے کا طریقہ اس کے اندر بہت زیادہ تھا ابھی بہت وسیع تھا کہ اسلامی تعلیمات کے حوالے سے کسی بھی میرے ذہن میں کوئی سوال اٹھتا بیان بات کرنی ہے جس کا گہرا مطالعہ کیا تھا کہیں نہ کہیں سے کوئی ایسی حدیث پیش کر دیتا ہے اس کو اکثر لوگ نہیں جانتے تھے اور اس کا بھی مطالعہ تھا اور اس کی گرفت حاصل کرنے کی کوشش کی تو سمجھ لینا چاہتا تھا میں نے اس سے پوچھا تھا کہ اس نے عربی کا مطالعہ نہیں کیا ہے اس نے مجھے بھی مختلف مقامات پر مشتمل ایک جامع فہرست میں اور میری رہنمائی کی مناسب اور بہتر تعلقات تھے تھے اور وہ ساری تکلیف ہوئی تھی ان تمام ذہنی صلاحیتوں کو تالے صرف خدا کا قرب حاصل کرنے اور جماعت کی خدمت کے لیے استعمال کیا ہے کہیں تو خواب ہیں بالخصوص ایسی ہیں جن کے بارے میں تعلیمی اخراجات بتایا کیا ایسا لگتا ہے کہ اس میں اس کی شادی کی طرف اشارہ ہے تاریخ اپنے بیٹے طلال کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے بتائی کہ تم اپنے والدین میں سے کسی ایک کے مرنے کا شدید خوف تھا اور اس کی وجہ یہ تھی کہ چادر کی شہادت کے بارے میں جانتا تھا یہ بات کرتے وقت العصر سنجیدہ ہو گیا اور اپنی آواز آہستہ کر لیں اس کی قیمت کیا ہے کام کہتے ہیں کہ میں جو تھا اس میں یہ تھا کہ میں اپنے ساتھیوں کی طرح طرح کے واقع ہونے کا دعویٰ تو نہیں کرتا میں نے دیکھی ہے جس میں تھا ہوگا تلے دبے ہوئے ہیں خواب میں یہ دیکھا اور جھنڈا اٹھائے جنت میں داخل ہو رہا ہے ہے اور ہر کوئی اس کے نام سے پکار رہا ہے کہ مرزا غلام قادر آگیا ہے دوسری کتاب پہلے کہاں مصروف ہے میرے پاس محفوظ ہے جب حمل کے دوران بیمار تھی حالت ہو گئی تھی کئی دفعہ ہسپتال میں داخل کیا گیا وہ مجھے بار بار فون کرتے اور پھر کیا ہے اس کے انتقال کے بعد زندہ رہیں گی اور کہتا ہے کچھ سال پہلے خواب دیکھی تھی جہاں میں جنت میں داخل ہو رہا ہوں اور وہاں میرے رشتہ داروں کی طرف سے خوش آمدید پارٹی کا انتظام کیا گیا ہے میں فوت ہونے پر کافی حیران ہوں اور پریشان ہو کے میری چھوٹی بہن کو نکال کر لے اس کا ہسپتال میں ڈاکٹروں نے بڑے سنجیدہ اور لفظوں میں بھی ہوگیا کیا کہتی ہے مجھے تعالی کی ذات پر فخر ہے خلافت کی کوئی بھی چھوٹی بہن حسن کہتے ہیں کہ بہترین رول ماڈل تھے مجھے ان سے کوئی بات سیکھنے کا موقع کی باتیں سیکھنے کا موقع ملا ایک دن کے اندرتو اس نے مجھے کہا کہ میں کسی مذہب کا مذاق نہیں اڑانا چاہیے اس میں لوگ بھی ہمارے خلاف بولیں گے عابد بھائی مرکزی سیکرٹریٹ کے کہتے ہیں کہ تعلیم کے ساتھ میرا رشتہ صرف ایک ہی نہیں تھا بلکہ بہت سارے رشتے پر مشتمل تھا جس کو میں لگتا تھا لیکن میں ان کا فرق نہیں تھا ایک چھوٹے بھائی اور دوست کی طرح تھا ہمیشہ محسوس کی اور مشاہدہ بھی کیا تو اسے حضرت موسی علیہ السلام کے خاندان سے بے پناہ محبت تھی اور خاندان کے لیکن لیکن اگر خاندان کے اندر سے کسی نے کبھی کوئی غلط کام کیا ہوتا تو بہت زیادہ تر محسوس کرتا تھا کیونکہ یہ حضرت موسی علیہ السلام اور یہود کو بد نام کرنے والی بات ہوتی ہے لیکن یہ نہیں کہتی ہو تو ایسا ہو جو اسلام کے نام پر کچھ کرتا ہے درد ہوتا تھا اگرچہ اسے وزیرستان کے خاندان کا رکن ہونے پر فخر تھا اس سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کرے اور وہ سارے لوگوں کو جانتے ہی نہیں نیوز میں کام کرنے کے چند دنوں بعد میرے پاس آیا اور کہا ہے کہ انڈیا نیوز کو ایم پی اے میں بہت معمولی سی سمجھ جاتا ہے ہے اور آنٹی لوگ پہلے ہی اپنا رویہ کیسے سے اس بات کا اظہار کرتے ہیں کہ ایم ٹی اے نیوز ایم پی اے کے سب سے مشہور پائے لیکن تعالی نے اس کمزوری کو مشغلہ بنا لیا اور اعتماد کا مکمل ہو جائے گا لوگ ایم پی اے اس کو ضرور دیکھا کریں گے اور کہیں گے میں بہترین پروگرام نیوز والا ہے یہ میرا چیلنج ہے اور میں اسے قبول کر لیا ہے اس نے بنائی اور پروگرام شروع کیے اور دستاویزی فلموں کی تیاری کے دوران اکثر دن میں کہتے ہیں کہ 18 19 گھنٹے کام کرتا ہے پیاروں کے گیا تھا ڈاکومنٹری بنائے گا افریقہ جانے سے پہلے پورے اہتمام کے ساتھ ہر چیز کی تیاری کی تفصیل سورنام تیار کیا اور مکمل شیڈول بنا کے روزانہ کا پروگرام کیا یا پیار کیا تاکہ کوئی وقت ضائع نہ ہو جانتا ہوں کہ مرا دل نہیں دیتا رہے گا تاہم ایک بات کہتے ہیں اس نے لکھی ہے اس میں اگر یہ کہا جائے کہ یہ ہو کیا یہ ہے تو وہ کہتا تھا کہ حضور کی رائے سے تھوڑی سی بھی مختلف ہے تو میں پورے دل سے قبول کروں گا کہ میں غلط ہوں حضرت مرزا بشیر احمد صاحب کے بنا رہا تھا اس کا گانا تو نہیں تو اس نے کہا کہ میرا نہیں خیال کہ اتنی اچھی ہوگی کیونکہ وہ براہ راست خلیفہ کے بارے میں نہیں ہے لیکن اس کا خلاف سے تعلق نہیں لکھا ہے صاحب کو منانے کا ارادہ کر رہا تھا اس لیے اس نے مجھے بھی کچھ کام دیا تھا اور اللہ تعالیٰ کے خوف سے بہت اچھی ڈاکومنٹ بنایا کرتا تھاسے کام کا جائزہ لے لیا کرتا تھا بہت گہرائی میں جا کر معاملات دیکھتا تھا اگر غیرمحرم موسی علیہ السلام کی تکلیف یا اخراج کے شہزادے اور ہدایات کو لوگوں کو بچانے کے بارے میں کوئی خیال پیدا ہوتا تھا عطا اللہ اجرکم سے بات کرتا اور اپنے خیالات کا اظہار کرتا مختلف آن لائن ذرائع سے پیغام کو کس لوگوں تک پہنچایا جا سکتا ہے ہے کہ کہ آپ کی طبیعت کو گہرائی میں جاکر سمجھتا تھا اور پھر بھی کرتا تھا سچ بولنے کو ترجیح دیتا تھا اگر کوئی مشورہ دیتا دینا ہوتا یا پھر رائے کا اظہار کرنا ہوتا ہے سچائی کے ساتھ بات نہیں ہوتی تھی دوسرے کے ساتھ کام کرتے ہوئے صرف دیکھ صاحب لکھتے ہیں کہ 2001 سے 2007 تک فوج نے بتایا تھا اس نے کوئی جواب نہیں دیا جائے گا تو سنجیدہ ذہین دینی معلومات کو بلانے کا شوق رکھنے والا نماز آٹھ رکعت ادا کرنے والا علمبردار مہمان نواز بڑوں کا احترام کرنے والا سے محبت کرنے والا اور ان کی باتوں کو شوق سے سننے والا ذمہ داریوں کو احسن رضا کرنے والا غور و فکر کرنے والا ذکر الہی کرنے والا تبلیغی کاموں کا شوق سے کرنے والا قرآن کریم کی وہ سورتیں جو پڑھنے والا لتا رفیع اور بھی نکھر کر سامنے آئی ہیں وہ کہہ رہی ہیں کہ پہلے کی خوبی جو میں نے ابھی کی حیثیت سے ہر سال کی تھی اور اپنے اپنے حلقوں کا کہنا تھا کہ خدا کے اپنے لفظوں کے بعد تھا کبھی اس نے دنیا کی کسی قسم کی لالچ نہیں دیکھی میں جب اس کے سامنے دنیا داری کی بات ہوتی تو اپنے خاص انداز میں ہوا کرتا تھا کہ وقت ہونے کی وجہ سے خدا نے اس کو ان سب معاملات سے بے پرواکر دیا اور اس کی ہر ضرورت کو خدا اے خدا تو ہے سب سے پہلے بھائی کے ساتھ ہی اس میں کام کرنے کے عرصے میں تالے نے میرے ناصر میرے کول کدی موڑ کے استاد بھی تھے اور اس سے بڑھ کے دوستوں بھائی تھے تھے کہتے ہیں تین سال کے عرصے میں تعلیم کو قائم رکھتے ہوئے دونوں کو بہت خیال رکھتے ہوئے دیکھا وقت سے پہلے مر جاتے ہیں اور اس بات کا کبھی کوئی دیکھا میں نے اپنے وقت سے پہلے ادا کر دیا کرتے تھے بارے واقعات تو بہت اچھے ہیں بہت لوگوں نے لکھا ہے لیکن وہ پھر سے اسلام کی جسمانی اور روحانی الونے کا حق بھی ادا کر دیا اور اس کو بھی اللہ تعالی نے میں نے ایسا کیا کہا سالوں کی حال میں سے تھا تو محرم کے مہینے میں میں اس کو پانے کے لئے چلا da1 حیران کر دیا تھا جیسے میں نے کہا اللہ تعالی ان کے درجات بلند سے بلند تر چلا جائے آئیے امید ہے کہ اللہ تعالی نے میں نے اسے صلی اللہ علیہ وسلم کے قدموں میں جگہ بھی ہو گی بلکہ کسی نے اس کے بعد اب بھی دیکھیں کہ وہ وہ کیا ہے صلی اللہ علیہ وسلم کی جگہ کھڑے ہیں اور تالے دوڑتا ہوا کرم سے مراد ہے اور ہاتھوں سے لٹا کر کہتے ہیں کہ میرے بیٹے کو خوش آمدید بس ایسے ہی خوش قسمت ہیں ہیں وہ وہ جو دین کی خاطر قربانی کرکے کے اس مقام کو پا لیتے ہیں ہیں اللہ تعالی علی اس کے بیوی بچوں کو بھی حافظ و ناصر ہو ہو اور انہوں نے اس کے ماں باپ اور بہن بھائیوں کو بھی صبر اور حوصلہ دے اور اس کی بہن بھائیوں کی اولاد میں بھی اس کے لئے کو جاری رکھنے کی توفیق دے توفیق دے تے ہے ہےجنوبی متوکل والے نال شرور انفسنا ومن سیئات اعمالنا من العلل النحویۃ فی الاحادیث اللہ الہ الا اللہ محمد الرسول اللہ ایوان الرحمۃ اللہ الرحیم اکبر

 58 total views,  2 views today

Leave a Reply

%d bloggers like this: