𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 (𝐚𝐬) 𝐢𝐬 𝐭𝐡𝐞 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐢𝐬 𝐭𝐢𝐦𝐞 & 𝐚𝐠𝐞 (امام مہدیؑ ہی اس زمانہ کے ذوالقرنین ہیں)




𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 (𝐚𝐬) 𝐢𝐬 𝐭𝐡𝐞 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐢𝐬 𝐭𝐢𝐦𝐞 & 𝐚𝐠𝐞 (امام مہدیؑ ہی اس زمانہ کے ذوالقرنین ہیں)

Jul 16, 2021

پھول بسم اللہ الرحمن الرحیم اسلام علیکم ورحمتہ اللہ وبراکاتہ تحریرات سیدنا حضرت اگست فیصل آباد اسلام پر جانب سے اٹھائے جانے والے اعتراضات پر مشتمل پروگرام لے کر آپ کی خدمت میں ایک بار پھر حاضر خدمت ہیں اسٹوڈیو میں حادثہ عبدالوہاب کے ساتھ محترم مولانا ہادیہ جی چودھری صاحب شامل گفتگو ہوں گے جو ان اعتراضات کے جواب دیں گے حاجی صاحب برہین احمدیہ پر ہم عتراضات کے جوابات کا سلسلہ شروع کیا ہے ان کا حصہ پنجم روحانی خزائن کی جلد نمبر 21 ہے اس کا نمبر 118 الاسلام نے یہ لکھا ہے بعض احادیث میں آیا ہے کہ آنے والے مسیح کی ایک علامت یہ ہے کہ وہ مجھے اس پر اعتراض یہ ہے کہ مخالفین کہتے ہیں کہ اس قسم کی کوئی روایت نہیں ہے اس کے بارے میں ہمارے سامنے ان کے سامنے پیش کرے بسم اللہ الرحمن الرحیم نحمدہ و نصلی علی رسولہ الکریم و علی عبدالمسیح مود یہ جو آپ نے اس کا حوالہ دیا ہے احمدیہ حصہ پنجم صفحہ 118 119 میں پڑھتا ہوں ہے حضور تحریرفرماتے ہیں اسی طرح خدا تعالی نے رمضان کرنین بھی رکھا کیونکہ خدا تعالیٰ کی میری نسبت یہ وحی مقدس کے جری اللہ فی حلل الانبیاء یہ معنی ہیں کہ خدا کا رسول تمام نبیوں کے پیراہن میں یہ چاہتی ہے کہ مجھ میں ذوالقرنین کے بھی صفات ہوں کیونکہ سو رہا کہ آپ سے ثابت ہے کہ ذوالقرنین بھی صاحب وہی تھا ملالہ نے اس کی نسبت فرمایا ہے کل نہیں عزل کرنا ہے اس وحی الہی کے روح سے جڑی اللہ فی اولہ لمبیاں اس امت کے لئے ذوالقرنین میں ہوں اور قرآن شریف میں مثالی طور پر میری نسبت پیشگوئی موجود ہے مگر ان کے لئے جو فراست رکھتے یہ تو ظاہر ہے کہ ذلکرنین وہ ہوتا ہے جو دو صدیوں کو پانے والا ہوں اور میری نسبت یہ عجیب بات ہے کہ اس زمانے کے لوگ اس زمانے کے لوگوں نے جس قدر اپنے اپنے طور پر صدیوں کی تقسیم کر رکھی ہے تمام تقسیم کے لحاظ سے جب دیکھا جائے ظاہر ہوگا کہ میں نے ہر قوم کی دو صدیوں کو پا لیا ہے ہر قوم کے دو صدیوں کو پا لیا ہے عمر اسوقت تخمینہ 60 سال ظاہر ہے کہ اس حساب سے جیسا کہ میں نے دو ہجری صدیوں کو پا لیا ہے ایسا ہی دوائی صدیوں کو بھی پا لیا ہے اور ایسا ہی دو ہندی صدیوں کو بھی جن کا سن بکرماجیت سے شروع ہوتا ہے میں نے جہاں تک ممکن تھا کہ قدیم زمانے کے تمام ممالک شرقی اور مغربی کی مقرر شدہ صدیوں کا ملاحظہ کیا ہے قوم ایسی نہیں جس کی مقررکردہ صدیوں میں سے دوستی میں نے نہ پائی ہو اور بعض احادیث میں بھی آچکا ہے کہ آنے والے مسیح کی ایک یہ بھی علامت ہے زولکرنین ہوگا غضب موجزن سے وحی الٰہی کے میں ذوالقرنین ہو اور جو کچھ خدا تعالی نے قرآن شریف کی آیتوں کی نسبت جو سورہ کہف میں ذلکرنین کے قصے کے بارے میں ہے میرے پیشگوئی کے رنگ میں ماں نے کھولے ہیں جیل میں ان کو بیان کرتا ہوں مگر یاد رہے کہ پہلے معنوں سے انکار نہیں ہے وہ گذشتہ سے متعلق ہیں اور یہاں کے متعلق صرف قصہ گو کی طرح نہیں ہے بلکہ اس کے سارے قصے کے نیچے ایک پیش ہوئی ہے اور ذوالقرنین کا قصہ مسیح موعود کے زمانے کے لئے ایک پیشگوئی اپنے اندر رکھتا ہے یہ حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کی وہ تفصیلی عبارت ہے یا تعارفی عبارت ہے اس کے بعد حضرت موسی علیہ السلام نے ذلکرنین کا پورا قصہ سورہ کہف تفسیر بیان فرمائی ہے تو وہ پڑھنے کے لائق ہے کس طرح ہر مسیح موعود علیہ الصلاۃ والسلام میں یہ ذلکرنین والی پوری ہوتی ہے تو اللہ تعالی کی وحی کے مطابق حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے یہ دعویٰ فرمایا کہ میں ضرور کرنا ہے اور تائید کے طور پر آپ نے حدیث کا حوالہ دیا اور یہ مہینہ ہم پہلے وضاحت کر چکے ہیں موترہ الصلاۃ والسلام نے فرمایا کہ مہدی کے بارے میں جتنی حدیثیں ہیں ہیں ہیں وہ مجروح ہے اور اس کو آپ نے صحیح قرار دیا ہے باقی جتنی ہے غلامی سے کوئی اگر تائیدی طور پر حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کے دعوے قرآن کریم میں بیان شدہ عورت کی نشانیاں اور حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام پر اللہ تعالی نے جو وحی اتاری اس سے جو معاف کر رکھتی ہوگی وہ درست اور ہی درست قرار دی جا سکتی ہیں اور ان کو اپنے کی جگہ تائید کے طور پر پیش فرمایا ہے بیانی میں سے ہے کہ ذوالقرنین کے بارے میں بعض روایات ہی احادیث ہے تو وہ موجود ہے لیکن یہ تائید کے طور پر ہے یہ بنیاد نہیں ہے اس بارے میں بھی یہی بیان فرمایا کہ جو اللہ تعالی نے وحی کے ذریعے مجھے بتایا ہے اور قرآن کریم میں اس کی بنیاد موجود ہے اسے از مسیح موعودعلیہ الصلوٰۃ والسلام کا بیان جو ہے وہ واضح ہو جاتا ہے کہ اس میں کسی قسم کی ان کا کوئی غم نہیں ہے اور بنیاد حدیث پر نہیں ہے پر جو مہدی کے بارے میں تراشی گئی اور ان پر جرح کی گئی ہے تو یہ وضاحت پہلے آ چکی ہے ذلکرنین ہے اس کے دو پہلو ہیں جو وضاحت طلب ہے ایک یہ کہ قرآن کریم میں یہ کیا واقع ہے اور جو دوسرا ہے ظلم کرنا کے معنی کیا ہے طوطے والا یعنی چیز کا کوئی مالک ہو یا اس کا اس میں وفات پائی جاتی تو اس کو زندہ ہے جو اب یہ اس طرح کے الفاظ استعمال کرتے ہیں تو جو کرنین ہے یہ تثنیہ کا صیغہ ہے اور کرنے دو کرن والا اور قانون کے دو معنی ہیں سو سال اور ایک سنگھ جانور کے سر پے ہوتے ہیں صدیاں اور سینگ اور تیسرا کا معنی ہے اور کر لو میں نے قوم ہے قوم کے سردار کو قلم کہتے ہیں تو یہ تینوں مانے جو ہے حضرت مسیح موعود علیہ الصلاۃ والسلام میں جامع طور پر ثابت ہوتے ہیں دو سینگوں کی بات کریں تو یہ صحیح حدیث میں ابن ماجہ کی حدیث کتاب الفتن باب شدہ تھی زبان میں مہدی و عیسی آپ کا ایک سینگ مہدی اور ایک مسیح دو صفات آپ میں ہیں اسی میں ہی آپ کو ذلیل کرنا ہے ثابت کر دیا گیا اس کے علاوہ باقی اور تشریحات بھی ہیں میانوالی تحصیل پڑھے ہنسی السلام نے بیان فرمائی تو اس میں مشرق و مغرب میں آپ کی تبلیغ آپ کا پیغام وہ سال کر نمازی کے ذلکرنین کے واقعات کے پس منظر میں حضرت موسی علیہ السلام کی فتوحات نظر آتی ہیں حضرت مصلح موعود علیہ السلام کی تحریر میں آکر بیان کروں گا تو حضرت مسیح موعود علیہ الصلاۃ والسلام میں یہ جو بیان فرمایا کہ کا یہاں ایک اور بات نہیں میں

سطحوں کے از مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام پر قرآن کریم کی آیات میں جو تعبیر تاویل آپ کی ذات پر لاگو ہوتی ہے اس کے اولین استعمال ہوتا ہے اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر ہوتا ہے اور یہ جو ذوالقرنین کا کی صفات رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مقدم اول ہے ابھی مشرق و مغرب میں غلبہ واضح ہے ثابت ہے قرآن کریم میں اس کا ذکر ہے اور یہ دنیا کے سارے کناروں تک یہ غلبہ ہونا ہے تو اسی طرح حضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے ایک زمانہ ادھر موسوی شریعت کا پایا اور پھر آپ نے اپنی شریعت کا زمانہ ہے اسے بھی تو ہسدی ابھی آپ نے دو بھائی ہیں تو غلط طور پر رسول اللہ صلی وسلم پر یہ مانے ثابت ہوتے ہیں لیکن یہاں جو کہ بات حضرت مسیح موعود علیہ السلام کے دعوے کی ہو رہی ہے اس لیے حضرت مسیح موعودعلیہ الصلوٰۃ والسلام کا ذکر کریں گے اصل بات یہ تھی کہ ذلکرنین تھا کون جس کا ذکر سورۃ الکہف میں اور اللہ تعالی کے ساتھ تو ہم کلام ہوتا تھا اللہ تعالی ان کو اپنے احکام جاری کرتا تھا اس کے مطابق کو پیش رفت کرتے تھے اس کا ذکر ہمیں ملتا ہے پرانے عہد نامے میں دانیال نبی کی کتاب میں باب 8 آیت 20 اور 21 میں تو اس میں کہا جاتا ہے کہ دانیال نبی نے خواب میں دیکھا کہ دو سینگوں والا مینڈھا راستے میں کھڑا ہے جس وقت فرشتے نے کہا کہ یہ میں اور فارس کا بادشاہ ہے یہ ذلکرنین میں اور فارس کے بادشاہ تھے ان کا نام خور سے بیان کیا جاتا ہے اور یہ غیر معمولی روحانی قوت والے انسان تھے اور توحید پرست خدا تعالیٰ کے مقرب تھے اور خدا تعالیٰ سے ہمکلام کے جس طرح کے حضرت نوح علیہ السلام نے قرآن کریم کا حوالہ دیا وقت نازل کر ہم نے کہا یعنی اللہ تعالی نے ان سے باتیں کیں ذوالقرنین کا ایک مختصر تعارف تھا حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے یہ بیان فرمایا کہ ہر قوم کی میں نے دو صدیاں بھائی ہیں یہ میرے پاس سب صدیوں کے سال بھی ہیں اور ان کے نام بھی ہے اور یہ 32 کیلنڈرز 32 قوموں کے کیلنڈر اور تقریبا ساری دنیا کو قتل کرتے ہیں میرا خیال ہے اس میں کوئی باقی رہ جاتا ہوں کاموں میں جو ہے اس ویک اینڈ پر جو ہے وہ چلتا ہے اور سارے اس میں آ جاتے ہیں اسلامی لحاظ سے وہ چلتا ہے لیکن یہ ہر قوم کا ہے تو اس میں چند ایک نام پر دیتا ہوں یہود کا کلینڈر ہے رومیوں کا کلنڈر ہے بکر میں ایسی عطا کیا بنا نظر جو لغوی معنی

الیکشن اس طرح تیس کلینڈر ہے جن کے مطابق حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے دو صدیاں پائی ہیں اس لئے ذلکرنین کی تعبیر اس کے ماں نے اس کی تصویر ساری حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام میں موجود ہے کہ آپ دو ساتھیوں کو پانے والے جو اس کی تشریح اور تعمیر کے لحاظ سے باتیں تھیں باقی یہ کہنا کہ روایات میں نہیں آ دیس میں نہیں ہیں تو بتا دیں اس کا مطلب یہ نہیں کہ جو مرفوع متصل اور صحیح احادیث ہوں اس کو کہا جاتا ہے جو کتابوں میں درج ہو جاتی ہیں بزرگوں کے لکھے ہوئے لکھے ہوئے کے مطابق ہوئی اور یہ مجموعہ احادیث کے بہت ہے تو ان میں سے چند ایک آپ کے سامنے بیان کر دیتا ہوں میں جمع حدیث امام مہدی اس میں بھی یہ حوالہ موجود ہیں اس میں کہتے ہیں کہ لاہور کالج حماد نے اس میں لکھا ہے ذوالقرنین کے بارے میں وہ بال المغرب المشرق عوان اللہ تبارک و تعالی سناتا ہوں پھر قائم مودی وہ جو ظلم کرنا تھا جو اس کو ختم کرنا ہے اللہ تعالی نے فرمایا اور مغرب اور مشرق میں اس نے غلبہ حاصل کیا اللہ تعالی یہی سنت امامت میں امام قائم میں یہ کام کرے گا تو اس میں بھی ظاہر ہو گئی ہیں وبلغو حشر کا لغوی ہاورو ہم زمین کے مشرق و مغرب میں اللہ نے تبلیغ آئے گا علاج بالغذا اور اتارچڑھاؤ نے شہر آشوب و فراز میں کوئی جگہ نہیں رہ گئی جہاں وہاں پہنچے گا حضور کا نیلا ہو جو ظلم کرنا نے جہاں جہاں صرف یہ یا پہنچا وہاں یہ بھی پہنچیں گے اور پھر آگے جا کے اس کی جو علامت بیان فرمایا اللہ اللہ بھائی عدنان پاکستان کما مولا جو روندے پر امام مہدی کی علامات ایسا نزول ثانی کے علامات ہے یہاں بیان فرمائی تو اس کا جو القرنین کا ذکر امت میں آنے والا ہے وہ احادیث میں موجود ہے معجم احادیث الامام المہدی معجم احادیث الامام المہدی تلیفون شرم و عرفان اسلامی ہجری سال حدیث نبوی عنوان میں یہ حدیث بھی لکھا یہ الجامع لاحکام القرآن

امام قرطبی کے لئے یعنی اہل سنت کے لئے بھی یہ بالکل واضح ہے اس پر اپنا علمی بنیاد رکھتے اپنے تشریحات کیا واقعی تعلیمات کی اس میں انہوں نے بہت ہی واضح طور پر لکھ دیا ہے کہ لائیو چل رہا ہوں علاءالدین کوئی ہے جو قرآن کریم کی آیت ہے سورۃ توبہ میں سورۃ فتح میں سورۃ فاتحہ میں اللہ رسولہ بالھدیٰ و دین الحق کھلے ہیں اس کے تحت لکھتے ہیں واہ واہ دی پیارا امام مہدی کے ذریعے ہوگا وقت کی لا علم حاصل کرنا ہے یہ کہا گیا ہے کہ اس کا نام ضرور کرنا ہے بڑی واضح ہونے یہ لینا ہوگا نہ کریم الصرف ہے نہ کریں معترف ہیں وہ دونوں طرف سے کریم ہوگا یا نہیں معزز ہوگا اور یعنی رسول اللہ صلی اللہ وسلم پر ایمان لانے کے لحاظ سے خدا تعالیٰ سے ہم کلام ہونے کے لحاظ سے یا کسی پہلو سے دیکھنے کو ہر طرح سے کریم اور یہ تیسری کتاب کمال الدین وتمام ا یہ امام کمی کی ہے یہ شیعوں کے امام ہیں انہوں نے بھی لکھا ہے نا اس میں ہلکا نہیں لینا خدا کو مانو اور پھر آگے کہتے ہیں ٹھیک ہوں مصروف ہوں پہلے ذوالقرنین کا ذکر کر کے وہ کہتے ہیں کہ وحی کو مصر وہ اس امت میں بھی تم میں بھی اس کا مسئلہ تھا اس جیسا کوئی آئے گا یا نہیں آئے گا دوبارہ یہ تین چار دفعہ لکھتے ہیں اور وہی روایت جو ہے کہ فی الحال ابھی عبدالوقاص تمام ہے جو ہر روز ماں امام مہدی کی علامات ہیں وہ بیان کر دیں اس کے بعد شیعوں کی الاختصاص انہوں نے واقعہ کو مسلح کرنا ان کے ساتھ قصہ بیان فرما کر ٹھیک ہے تم میں بھی اس جیسا آئے گا یعنی وہی جو کرنا ہے تو میں بھی ہوگا انہوں نے بھی دو تین جگہ اس میں لکھا پھر شیعوں کی ایک بڑی مشہور کتاب ہے صحافی یہاں بھی ہمارے پاس پڑی ہوئی ہے اس میں حیات کے تحت بی حضرت امام باقر رضی اللہ عنہ پلے کرو نہ لکھی ہے کے فی قوم نوح کے ایسا ظلم کرنے والا بیان کرکے ان حل کرنے میں کون بیان مولانا عبدالحنان ملالہ کا ایک سال بند تھا مگر زلکرنین کے نام سے لکھتے ہیں فرماتے ہیں ہم بات کر کے وہی قوم ثروت میں بھی اس جیسا ہوگا تو یہ روایت ایک جگہ نہیں بہت ساری کتابوں میں یہ تو میں چاند نکلا ہوں اور میں بھی ہے ویڈیو اعتراض ہے کہ حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے یہ بھی فرمایا کہ بعض احادیث میں ذکر کرنا ان کا ذکر آیا ہے وہاں سے معزول کرنا ہوگا یہ اعتراض درست نہیں ہے ایسے ثبوت عملی ثبوت واضح ثبوت ہمارے پاس موجود ہیں اور کتاب اس کی گواہی ان کے بارے میں حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے سیاسی میں براہین احمدیہ حصہ پنجم کے زمین میں میں صفا 314 ہے اس ذات کی قسم جس کے پاکستان کی اس میں فرماتے ہیں خدا نے مثال کے طور پر قرآن شریف میں خوب فرمایا کہ ذوالقرنین نے قوم کو دھوپ میں جلتے ہوئے پایا اور ان میں اور حساب میں کوئی آؤٹ نہ تھی اور اس کو منظور کرنے سے کوئی مدد نہیں چاہیے اس لیے وہ اسی بلا میں مبتلا رہیں لیکن ذوالقرنین کو ایک دوسری کو ملیں جنہوں نے ذلکرنین سے دشمن سے بچنے کے لیے مدد چاہیے ایک دیوار ان کے لیے بنائی گئی اس لیے وہ دشمن کی دست برد سے بچ گئے فرمایا سو میں سچ سچ کہتا ہوں کہ قرآن شریف کی آئندہ پیش گوئی کے مطابق وہ ذرکرنین میں ہوں

ہمارے قوم کے صدی کو پایا اور دھوپ میں جلنے والے وہ لوگ ہیں جنہوں نے مسلمانوں میں سے مجھے قبول نہیں کیا اور ٹیچر کے چشمے اور تاریکی میں بیٹھنے والے عیسائی ہیں جنہوں نے اس کتاب کو نظر اٹھا کر بھی نہ دیکھا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو اور وہ جن کے لئے دیوار بنائی گئی وہ میری جماعت ہے میں سچ سچ کہتا ہوں کہ وہی وہی میں ہوں وہی ہیں جن کا دین دشمنوں کے دستور سے بچے گا میں سچ سچ کہتا ہوں کہ وہی ہیں جن کا دین دشمنوں کے دس برس سے بچے گا ہر ایک بنیاد پرست ہے اس کو شیئر کر دہریت کھاتی جائے گی مگر اس جماعت کی بڑی عمر ہوگی اور شیطان پر غالب نہیں آئے گا لسانی گروہ ان پر غلبہ نہیں کرے گا ان کی حجت تلوار سے زیادہ اور نیزے سے زیادہ اندر گھسنے والی ہوگئی اور وہ قیامت تک ہر ایک مذہب پر غالب آتے رہیں گے ان شاء اللہ الذی تو یہ جماعت احمدیہ ہے جس کے افراد نے اعظم سلام کے دامن کو تھام کر آپ سے دھوپ سے بچنے کے لئے مدد چاہیں تو یہ جماعت انشاءاللہ ترقی کر رہی اور کرتی رہے گی صلی اللہ علیہ وسلم کے دین کو دیگر ادیان پر غالب کردے وآخر دعوانا ان الحمد للہ رب العالمین الاحد صاحب سہی تفصیلی جواب کے لئے پروگرام میں ایک نئے طرز کے جواب کے ساتھ آپ کی خدمت میں حاضر ہوں گے تب تک کے لئے السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ صرف دشمن کو کیا ہم نے بہت ضد ہے

#Islam#Ahmadiyya#TrueIslamCa 𝗢𝗥𝗜𝗚𝗜𝗡𝗔𝗟 𝗦𝗖𝗔𝗡𝗡𝗘𝗗 𝗥𝗘𝗙𝗘𝗥𝗘𝗡𝗖𝗘𝗦 𝗟𝗜𝗡𝗞: https://bit.ly/3zb5RYr 𝐕𝐈𝐃𝐄𝐎 𝐇𝐈𝐆𝐇𝐋𝐈𝐆𝐇𝐓𝐒 (𝐌𝐈𝐍𝐔𝐓𝐄 𝐂𝐀𝐒𝐓): 1:00 : 𝐀𝐥𝐥𝐞𝐠𝐚𝐭𝐢𝐨𝐧: 𝐇𝐚𝐳𝐫𝐚𝐭 𝐌𝐢𝐫𝐳𝐚 𝐒𝐚𝐡𝐢𝐛 (𝐚𝐬) 𝐜𝐥𝐚𝐢𝐦𝐞𝐝 𝐭𝐨 𝐛𝐞 𝐭𝐡𝐞 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐢𝐬 𝐚𝐠𝐞 𝐚𝐜𝐜𝐨𝐫𝐝𝐢𝐧𝐠 𝐭𝐨 𝐡𝐢𝐬 𝐖𝐚𝐡𝐢 𝐚𝐧𝐝 𝐀𝐡𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡. 𝐓𝐡𝐞𝐫𝐞 𝐚𝐫𝐞 𝐧𝐨 𝐬𝐮𝐜𝐡 𝐀𝐡𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡 𝐚𝐧𝐝 𝐭𝐡𝐢𝐬 𝐢𝐬 𝐚 𝐟𝐚𝐥𝐬𝐞 𝐜𝐥𝐚𝐢𝐦! 1:30 : 𝐀𝐧𝐬𝐰𝐞𝐫: 𝐋𝐞𝐭’𝐬 𝐫𝐞𝐚𝐝 𝐭𝐡𝐞 𝐨𝐫𝐢𝐠𝐢𝐧𝐚𝐥 𝐭𝐞𝐱𝐭 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐁𝐫𝐚𝐡𝐢𝐧 𝐀𝐡𝐦𝐚𝐝𝐢𝐲𝐲𝐚 𝐭𝐨 𝐮𝐧𝐝𝐞𝐫𝐬𝐭𝐚𝐧𝐝 𝐰𝐡𝐚𝐭 𝐇𝐚𝐳𝐫𝐚𝐭 𝐌𝐢𝐫𝐳𝐚 𝐒𝐚𝐡𝐢𝐛 𝐢𝐬 𝐬𝐭𝐚𝐭𝐢𝐧𝐠. 4:50 : 𝐑𝐞𝐟𝐞𝐫𝐞𝐧𝐜𝐞: 𝐖𝐚𝐭𝐜𝐡 𝐨𝐮𝐫 𝐭𝐰𝐨 𝐩𝐫𝐨𝐠𝐫𝐚𝐦𝐬 𝐭𝐡𝐚𝐭 𝐚𝐫𝐞 𝐫𝐞𝐥𝐚𝐭𝐞𝐝 𝐭𝐨 𝐭𝐡𝐢𝐬 𝐚𝐧𝐬𝐰𝐞𝐫: https://youtu.be/8Sr8JwAreughttps://youtu.be/WREJorxq5ow6:30 : 𝐑𝐞𝐟𝐞𝐫𝐞𝐧𝐜𝐞 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐃𝐢𝐜𝐭𝐢𝐨𝐧𝐚𝐫𝐲: 𝐌𝐞𝐚𝐧𝐢𝐧𝐠 𝐨𝐟 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐃𝐢𝐜𝐭𝐢𝐨𝐧𝐚𝐫𝐲 𝐚𝐧𝐝 𝐡𝐨𝐰 𝐭𝐡𝐞𝐬𝐞 𝐦𝐞𝐚𝐧𝐢𝐧𝐠𝐬 𝐚𝐫𝐞 𝐞𝐱𝐚𝐜𝐭𝐥𝐲 𝐜𝐨𝐦𝐩𝐥𝐞𝐭𝐞𝐝 𝐢𝐧 𝐭𝐡𝐞 𝐛𝐞𝐢𝐧𝐠 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐞 𝐏𝐫𝐨𝐦𝐢𝐬𝐞𝐝 𝐌𝐞𝐬𝐬𝐢𝐚𝐡 (𝐚𝐬) 7:45 : 𝐑𝐞𝐟𝐞𝐫𝐞𝐧𝐜𝐞 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐀𝐡𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡: 𝐋𝐢𝐬𝐭 𝐨𝐟 𝟏𝟏 𝐛𝐨𝐨𝐤𝐬 𝐰𝐡𝐞𝐫𝐞 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 𝐚𝐧𝐝 𝐄𝐬𝐬𝐚 𝐚𝐫𝐞 𝐭𝐨𝐥𝐝 𝐭𝐨 𝐛𝐞 𝐭𝐡𝐞 𝐬𝐚𝐦𝐞 𝐩𝐞𝐫𝐬𝐨𝐧…..(𝐌𝐞𝐭𝐚𝐩𝐡𝐨𝐫𝐢𝐜𝐚𝐥 𝐦𝐞𝐚𝐧𝐢𝐧𝐠 𝐨𝐟 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧) 9:40 : 𝐑𝐞𝐟𝐞𝐫𝐞𝐧𝐜𝐞 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐎𝐥𝐝 𝐓𝐞𝐬𝐭𝐚𝐦𝐞𝐧𝐭: 𝐖𝐡𝐨 𝐰𝐚𝐬 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐚𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐚𝐧𝐝 𝐡𝐢𝐬 𝐢𝐧𝐜𝐢𝐝𝐞𝐧𝐭 𝐢𝐧 𝐭𝐡𝐞 𝐨𝐥𝐝 𝐭𝐞𝐬𝐭𝐚𝐦𝐞𝐧𝐭 10:10 : 𝐑𝐞𝐟𝐞𝐫𝐞𝐧𝐜𝐞 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐭𝐡𝐞 𝐇𝐨𝐥𝐲 𝐐𝐮𝐫𝐚𝐧: 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐢𝐬 𝐦𝐞𝐧𝐭𝐢𝐨𝐧𝐞𝐝 𝐢𝐧 𝐭𝐡𝐞 𝐇𝐨𝐥𝐲 𝐐𝐮𝐫𝐚𝐧 𝐚𝐧𝐝 𝐡𝐞 𝐰𝐚𝐬 𝐫𝐞𝐜𝐢𝐩𝐢𝐞𝐧𝐭 𝐨𝐟 𝐫𝐞𝐯𝐞𝐥𝐚𝐭𝐢𝐨𝐧𝐬 10:40 : 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝟎𝟏: 𝐇𝐚𝐳𝐫𝐚𝐭 𝐌𝐢𝐫𝐳𝐚 𝐒𝐚𝐡𝐢𝐛 𝐰𝐚𝐬 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐚𝐬 𝐡𝐞 𝐰𝐢𝐭𝐧𝐞𝐬𝐬𝐞𝐝 𝐭𝐰𝐨 𝐜𝐞𝐧𝐭𝐮𝐫𝐢𝐞𝐬 𝐚𝐜𝐜𝐨𝐫𝐝𝐢𝐧𝐠 𝐭𝐨 𝐚𝐥𝐥 𝐭𝐡𝐞 𝐜𝐚𝐥𝐞𝐧𝐝𝐚𝐫𝐬 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐞 𝐰𝐨𝐫𝐥𝐝. 12:15 : 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝟎𝟐: 𝐇𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐀𝐮𝐭𝐡𝐞𝐧𝐭𝐢𝐜 𝐒𝐡𝐢𝐚 𝐁𝐨𝐨𝐤 “𝐌𝐮’𝐣𝐦 𝐀𝐡𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡 𝐟𝐢𝐥 𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢” 𝐚𝐛𝐨𝐮𝐭 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 𝐛𝐞𝐢𝐧𝐠 𝐭𝐡𝐞 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 14:00 : 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝟎𝟑: 𝐇𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐀𝐮𝐭𝐡𝐞𝐧𝐭𝐢𝐜 𝐒𝐮𝐧𝐧𝐢 𝐛𝐨𝐨𝐤 𝐚𝐮𝐭𝐡𝐨𝐫𝐞𝐝 𝐛𝐲 𝐫𝐞𝐬𝐩𝐞𝐜𝐭𝐞𝐝 𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐐𝐮𝐫𝐭𝐚𝐛𝐢 (𝐫𝐚) 𝐭𝐡𝐚𝐭 𝐬𝐭𝐚𝐭𝐞𝐬 𝐭𝐡𝐚𝐭 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 𝐰𝐢𝐥𝐥 𝐛𝐞 𝐚 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧!!! 15:15 : 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝟎𝟒: 𝐇𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐀𝐮𝐭𝐡𝐞𝐧𝐭𝐢𝐜 𝐒𝐡𝐢𝐚 𝐛𝐨𝐨𝐤 𝐚𝐮𝐭𝐡𝐨𝐫𝐞𝐝 𝐛𝐲 𝐫𝐞𝐬𝐩𝐞𝐜𝐭𝐞𝐝 𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐐𝐮𝐦𝐦𝐢 𝐬𝐭𝐚𝐭𝐢𝐧𝐠 𝐭𝐡𝐞 𝐬𝐚𝐦𝐞 𝐇𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡. 16:00 : 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝟎𝟓: 𝐇𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐀𝐮𝐭𝐡𝐞𝐧𝐭𝐢𝐜 𝐒𝐡𝐢𝐚 𝐛𝐨𝐨𝐤 “𝐀𝐥-𝐈𝐤𝐭𝐚𝐬𝐚𝐬” 𝐭𝐡𝐚𝐭 𝐡𝐚𝐬 𝐭𝐡𝐞 𝐬𝐚𝐦𝐞 𝐇𝐚𝐝𝐢𝐭𝐡. 16:15 : 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝟎𝟔: “𝐀𝐥-𝐒𝐚𝐟𝐢” 𝐛𝐲 𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐊𝐚𝐬𝐡𝐚𝐧𝐢 (𝐫𝐚) 𝐭𝐡𝐚𝐭 𝐧𝐚𝐫𝐫𝐚𝐭𝐞𝐬 𝐭𝐡𝐞 𝐐𝐮𝐫𝐚𝐧𝐢𝐜 𝐯𝐞𝐫𝐬𝐞𝐬 𝐚𝐧𝐝 𝐬𝐭𝐚𝐭𝐞𝐬 𝐚𝐛𝐨𝐮𝐭 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐛𝐞𝐢𝐧𝐠 𝐬𝐞𝐧𝐭 𝐚𝐠𝐚𝐢𝐧 𝐢𝐧 𝐭𝐡𝐞 𝐟𝐨𝐫𝐦 𝐨𝐟 𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 (𝐚𝐬) 17:30 : 𝐒𝐮𝐦𝐦𝐚𝐫𝐲: 𝐏𝐫𝐨𝐨𝐟 𝐟𝐫𝐨𝐦 𝐭𝐡𝐞 𝐰𝐫𝐢𝐭𝐢𝐧𝐠𝐬 𝐨𝐟 𝐇𝐚𝐳𝐫𝐚𝐭 𝐌𝐢𝐫𝐳𝐚 𝐒𝐚𝐡𝐢𝐛 (𝐚𝐬) 𝐭𝐡𝐚𝐭 𝐚 𝐰𝐡𝐲 𝐈𝐦𝐚𝐦 𝐌𝐚𝐡𝐝𝐢 𝐰𝐚𝐬 𝐠𝐢𝐯𝐞𝐧 𝐭𝐡𝐞 𝐧𝐚𝐦𝐞 𝐨𝐟 𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐚𝐧𝐝 𝐰𝐡𝐚𝐭 𝐡𝐚𝐩𝐩𝐞𝐧𝐬 𝐭𝐨 𝐭𝐡𝐨𝐬𝐞 𝐰𝐡𝐨 𝐝𝐨 𝐧𝐨𝐭 𝐚𝐜𝐜𝐞𝐩𝐭 𝐭𝐡𝐞 “𝐙𝐮𝐥𝐪𝐮𝐫𝐧𝐚𝐢𝐧 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐢𝐬 𝐭𝐢𝐦𝐞 𝐚𝐧𝐝 𝐚𝐠𝐞”

 52 total views,  2 views today

Leave a Reply

%d bloggers like this: