𝐁𝐚𝐬𝐞𝐥𝐞𝐬𝐬 𝐚𝐥𝐥𝐞𝐠𝐚𝐭𝐢𝐨𝐧 – 𝐂𝐨𝐧𝐭𝐞𝐦𝐩𝐭 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐞 𝐏𝐫𝐨𝐩𝐡𝐞𝐭𝐬 (انبیاء علیھم السلام کی توہین کا بے بنیاد الزام)




𝐁𝐚𝐬𝐞𝐥𝐞𝐬𝐬 𝐚𝐥𝐥𝐞𝐠𝐚𝐭𝐢𝐨𝐧 – 𝐂𝐨𝐧𝐭𝐞𝐦𝐩𝐭 𝐨𝐟 𝐭𝐡𝐞 𝐏𝐫𝐨𝐩𝐡𝐞𝐭𝐬 (انبیاء علیھم السلام کی توہین کا بے بنیاد الزام)

Jun 25, 2021

پھول موسم شیطان الرجیم بسم اللہ الرحمن الرحیم ناظرین کرام اسلام علیکم ورحمتہ اللہ وبراکاتہ حضرت اقدس مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ کتب پر مخالفین کی طرف سے اٹھائے جانے والے اعتراضات کے جواب لے کر آپ کی خدمت میں حاضر ہیں اعراب کے ساتھ محترم مولانا حالی چوہدری صاحب تشریف فرما ہیں ان شاء اللہ ان اعداد کے جواب دیں گے اگر پروگرام میں خوش آمدید اسلام علیکم ورحمۃ اللہ برکاتہ و براہین احمدیہ پر ہم مخالفین کی طرف سے اٹھائے جاتے ہیں رہے ہیں کے راز جو مخالف اٹھاتے ہیں وہ کہتے ہیں کہ حضرت مسیح علیہ الصلوۃ والسلام نے انبیاء کی نوزل توہین کی ہے اور جب ان سے پوچھا جاتا ہے کہ اس کو ثابت کیسے کرتے ہیں بات کیسے ہوتی ہے تو وہ وہ بعض باتیں پیش کرتے ہیں اس میں سے ایک چیز جو پیش کرتے ہیں وہ بھی ہم اس کے بارے میں ذکر کریں گے کہ اسلام کا شیر ہے حضور نے فرمایا ہے کہ میں کبھی آدم کبھی موسی میں یعقوب ہوں نیز ابراہیم حونصلہ میری بے شمار اس میں وہ کہتے ہیں کہ جنوبی کچھ انبیاء کی توہین ہوگی انڈیا کے توہین ہوگی میں کتنے نبی ہیں اس میں ایک دو تین چار جان وی تیری ہے باقی میں بتاتا ہوں مجھے سے آگے حضور نے فرمایا ایک شجر ہو جس کو دعوت دی صفت کے پر لگے داود اور جالوت سے میسج کا میں نے مریم ہوں مگر اتنا نہیں میں گھر سے نیز مہدی ہوں مگر دھرتی اور بے کار کتنے بچے ہیں باقاعدہ شروع کرتے ہیں اس کا یہ تو حرام بیع کے مسائل ہیں ٹائپ کرنا شروع کرتے ہیں بسم اللہ الرحمن الرحیم نحمدہ و نصلی علی رسولہ الکریم و علی عبدالمسیح موت جیسا کہ ابھی ناظرین سنا کے میں کبھی آدم کبھی موسی کبھی یعقوب ہوں نیز ابراہیم نسلی ہے میری بے شمار اس پر اعتراض ہے کہ حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے انبیاء کی ہو یا توہین کر دی مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے صرف یہی نہیں اور شئیر بھی پاکستان میں سزائے ہیں حضرت داؤد علیہ السلام سے بھی آپ کو مشابہت ہے حضرت عیسی علیہ الصلاۃ والسلام ہے اور اگر آپ صلی اللہ وسلم کی پیشگوئی کے مطابق آپ ہی مسیح ابن مریم ہی اس امت کے لئے مگر حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام فرماتے ہیں یہ نزول مسیح روحانی خزائن کی جلد آ رہا ہے کیا اس نے مجھے پیدا کرکے یعنی اللہ تعالی نے مجھے پیدا کرکے ہارے گزشتہ نبی سے مجھے اس نے تشبیہ دی اس نے تجویز دی کہ وہی میرا نام رکھ دیا اعدم ابراہیم نوح موسی داؤد سلیمان یوسف کی حیثیت وغیرہ امام نام براہیمی میرے رکھے گئے اس صورت میں گویا تمام انبیاء گزشتہ امت میں دوبارہ پیدا ہوگئے اب تک کی سب سے آخر مسئلہ پیدا ہوگیا ٹھیک ہے اس کے بعد پھر حقیقت الوحی میں فرمایا وحی الہی میں خدا نے میرا نام روشن رکھا ہے عطاءاللہ والا گلہ بنانا اور رسولی کی تشریح کر رہے ہیں فرمایا اس وحی الہی میں خدا تعالیٰ نے میرا نام رسول رکھا ہے رسول کی جمع الجمع کیونکہ جیسا کہ براہین احمدیہ میں لکھا گیا ہے خدا تعالیٰ نے مجھے تمام انبیاء علیہم السلام کا مزہ ٹھہرایا ہے اور تمام نبیوں کے نام میری طرف منسوب کئے ہیں آدم ہوں میں شہر سو مینوں ہوں میں ابراہیم ہوں میں اسحاق ہو میں اسماعیل ہوں میں یعقوب ہوں میں یوسف و میں موسی ہوں میں داؤد میں ایسا ہو حضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے نام کا مظہر اتم ہو یعنی ذہنی طور پر محمد اور احمد ہو تو یہ حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے خود نبیوں سے تشبیہ نہیں دی اللہ تعالی نے آپ کو یہ تصویر دی ہے مسئلہ آیا اور یہ حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کی آنے والے مسیح کی جو آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کا امتی آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے فیض سے مقام نبوت پر پہنچنے والا وجود وسیع بن آج کا یہ مقام ہے تو اس میں اگر یہ نام نہ دیا جائے تو غصہ آنے والے کی تحقیر ہوتی ہے اور اس میں تو سارے نبیوں کو زندہ کر کے یہاں لایا گیا تو یہ ایک مقام ہے حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کا اور اس کی بنیاد سورۃ المرسلات کی آیت نمبر 12 میں وائزر و سلوک کے آدمی ہیں یہ آخری زمانے کی نشانیاں ہیں اس میں ہے کہ جب تمام رسولوں کو وقت مقرر پر لایا جائے گا کیسے لگایا جاتا ہے اس کے پاس کے فارمولا ہے کسی کے پاس بھی نظریہ ہے کسی کے پاس کی پیش گوئی ہے علاوہ تو جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی صورت جمعہ کے مطابق دوسری باسط مقدر ہے پریمی تو رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے سارے نبی جمع ہے گویا وہ کا مسئلہ موجود ہے اس زمانے میں جو آپ کی بات سنی ہے سورج ماں کے مطابق تو یہ جو پہلو ہے یہ حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کی ذات میں آپ کے مقام میں یہ موجود ہے لیکن صلی اللہ علیہ وسلم پر ایمان لانے والے آپ کی قوت قدسیہ آپ کی تاثیر ہمارے بلند مقام پانے والے 16 اور اولیاء کی صورت میں بھی اپنے آپ کو یہ نام دیتے ہیں مثلا حضرت سید عبدالقادر جیلانی رحمتہ اللہ علیہ نے اپنے آپ کو روح کہا فرماتے ہیں اگر قرآن میں قرآن غصب المثانی اور فاتحہ ہو بار بار در آنے والی آیات اور وہ حضرات روحانی اور میں روحانی جتنا جبرائیل یعنی وہ بن جاتا ہے اس سے مراد پھر حضرت شمس تبریزی وہ لکھتے ہیں کہ ہم آدم وآدم توئی ہم ایسی مریم ہوئی ہم راز وہ محرم تو یہ چیزیں بتانے درویش کا وہ بھی اپنے آپ کو آدم اور ایسا کہہ رہے ہیں یہاں سے صلی اللہ علیہ وسلم کے فیض سے مراد ملتے ہیں نبیوں کے اور آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا علماء امتی کانبیاء بنی اسرائیل جب یہ بات موجود ہے کیسے ہو سکتا ہے حضرت بایزید بسطامی رحمۃ اللہ علیہ ان کے بلند پایہ کے صوفی ہیں اور ان کے بارے میں تصوف کی کتابوں میں ان کے درجے کے بارے میں لکھا ہے فرشتوں میں جبرائیل ہے ان کا مقام ہے صوفیاء میں ان کا مقام وہ کہتے ہیں انگلش کیا ہے پوچھا گیا عرش کیا ہے فرمایا میں ہوں کرسی کیا ہے فرمایا ہے میں ہوں لوح قلم کیا ہے فرمایا میں ہوں پوچھا کہتے ہیں ابراہیم موسی اور محمد صلی اللہ علیہ وسلم اللہ کے برگزیدہ بندے ہیں یا میں معاملہ اس سے بھی اوپر چلا گیا تو وہی دعویٰ غازی محمود یعنی ایک بلند مقام جو خاتم الاولیاء ہیں امت میں اور نبوت کے مقام پر جن کو نبی کردیا کر وہ یہ بات کہتا ہے تو یہ جو ہے معاملات دینی معاملات سمجھ سے تعلق رکھنے والے اس کے لیے کچھ روحانی چاہیے کچھ ہدایت چاہیے اور ہدایت امام کے بغیر نہیں ملتی پھر دیکھیں کہ حضرت مولانا شاہ نیاز احمد بریلوی وہ کہتے ہیں عدم و شہر سونو ہو غیر حقیقت نبوت الموشح سونو ہود غیرحقیقت من بود صاحب ہر عصر منم من نہ منم نہ من منم بڑی مزیدار ترکیب ان کی اعظم شہر نو ہود اپنے زمانے کا ہر جو نبی تھا صاحب ہر وہ میں ہوں پھر کہتے ہیں ہماری امم ایسا بھی میں ہوں احمد ہاشمی من المسلمین میرے نرم نرم حضرت علی بھی میں ہی ہوں منم میں ہوں میں نے یہ دیوانے آج میں یہ بات موجود ہے یہ تو امت میں بعض بزرگوں کے دعوے تھے بات ہو رہی تھی حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کی جو آنے والا امام مہدی حکم عزوجل اور اللہ تعالی کی طرف سے نبوت کے مقام پر فائز مسلم نے بھی پیشگوئی کے نبی آئے گا انہوں خدا کی طرف سے آئے گا مسلم کی کتاب الفتن باب صفت جال میں چار دفعہ آنے والے کو نبی کر دیا ایک اور روایت میں فرمایا کہ ابو بکر عمر کے سب سے بہتر آدمی ہے مگر ایک نبی ہوگا یعنی آسمان سے بھی بلند ہے نبی کی پیروی تو موجود ہیں اس آنے والے کے بارے میں شیعہ دیکھیں شیعہ کتب میں ہمیں بہت نوازش آنے والے وہ تو امام القائم کہتے ہیں جو آنے والا ہے اس کے بارے میں لکھتے ہیں کہ جب وہ آئے گا تو کیا کہے گا یہ قول ہو یا معشر الخلایا کے ناراض ہیں جو جانوراں ابراہیم اسماعیل بن ابراہیم تا ہے کہ ابراہیم اور اسماعیل کو دیکھیں میں وہ ابراہیم اور اسماعیل من اراد ان ینظر الی نوح جاتا ہے کہ حضرت موسی علیہ السلام اور ان کے خلیفہ یوشح اس کو دیکھیں تو میں اور یوں سونگ ہم ناراض ہیں اگر ایسا شمو جو چاہتا ہے یا حضرت عیسیٰ علیہ السلام اور مولا علی علیہ السلام کو دیکھیں ان کے خلیفہ تھے کہ انسان ایسی چنوں نادان درامہ محمد صلی اللہ علیہ وسلم امیرالمومنین صلوٰۃ حال ہے مرزا محمد عامر تو میں وہ محمد بھی تھی جو لوگ بڑی باتیں پیش کی گئی ہے یہ بحارالانوار کی جلد نمبر 3 صفحہ 202 پہ ہے بابا ومایکون ظہور ہو رہی ہے اس کے بعد اسی کے تقریبا ترجمہ صراط السوی فی احوال المہدی میں موجود ہیں اور یہ اردو بھارت ہے لیکن انہوں نے کچھ نام ظاہر کیے ہیں کہ وہ کہیں گے کہ اگر وہ خواہ ہوں کہ جو شخص چاہتا ہے کہ دیکھے جناب آدم اور شہر کو برسوں دیکھے میری طرف میں ہوں عدم اور میں میں ہوں اور میں حسام میں ہوئی ابراہیم میں میں ہو موسی میں ہوئی وفا میں ہوں یا میں ہوں شمون میں محمد مصطفی اور میں ہوں باقی ائمہ علیہم السلام تو یہ اثرات سیاسی شیعوں کی کتاب ہے اس میں پھر آگے چلیں اسی بہانے انوار میں بابو والا دا مین اخبار الحوار النبی الکریم طرف الخاصہ تو علامہ یہ دل تیرا کا حوالہ ہے اسمال کھا جاتی ہے ذخیرہ کلمبیا ایک گروہ کے ساتھ آئے گا تجھے جب آیا ہے اور اس نے دعوی کیا ہے ان کے نبیوں کی تعلیمات اور ان کے خواص اندر صلی اللہ وسلم کے دل پر پیش کر رہا ہے اور یہ فیصلہ اس میں پوری ہو رہی ہے ادھر لالوکیت کی پیشگوئی پوری ہو رہی تو اعتراض کرتے ہیں مگر وہ یہ نہ لکھتا والا ہے وہ بھی ہے پوری نہیں لکھی گاؤں نہیں پھر یہ بابو بھائی کو اندازہ ولی صلوٰۃاللہ و ہیں وہ پہلے والا بحارالانوار جلد 13 اس میں انہوں نے آنے والے وجود کو امام قائم امام مہدی کو تمام نبیوں کا وارث قرار دیا ہے اور وہ صرف نام لکھے اسی طرح ہیں اسی باب میں لکھا ہے کہ خزینہ مسیح ابن مریم کی پیش گوئی کی ہے وہاں مشابہت کی وجہ سے مماثلت کی وجہ سے کی تو اس بارے میں میں نے لکھا ہے کہ ان القائم ہدیہ من صلی علی مرۃ علی رضی اللہ عنہ کی نسل میں سے ہوگا ناصبی سب نے مریم ہلکنو خلق کیا منوعات واضح آواز مکمل نصیر تو پھر کہتے یوتھ لاہور جلاواں جماعت لمبیاں اللہ تعالی سے وہ دے گا جو سب انبیاء کو دیا وزیر وفضل اور اپنے فضل سے اس کو زیادہ دے گا ایک شخص کو سب سے زیادہ دیکھا حضرت امام کاسانی رحمہ اللہ علیہ نے پیش گوئی کی تھی کہ فی العلوم والمعارف والحقیقۃ یہ کون جمیع الانبیاء والاولیاء تعمیرات بس اس کتاب میں یہ پیش گوئی اس سے اس سے طرح یہ غایۃ المقصود ہے یہ شیعوں کی کتاب ہے اس میں بھی انہوں نے وہی تمام انبیاء کے نام لکھے ہیں پھر آخر میں لکھتے ہیں وہ سارے انبیاء کے بھی 15 16 نبیوں کے نام ہے فرمایا کہ غلیظ اس کے درست شبیہ حضرت مہدی علیہ السلام با حضرات انبیاء سلام بیان صرف ہم السلام احادیث متواتر متفق علیہا بسیار وارد انگ کہ متواتر احادیث میں تمام انبیاء علیہ السلام سے اس کے مشابہ جو ہے وہ آئی ہوئی ہے اس میں اس میں قبر موجود ہیں امام مہدی علیہ الصلاۃ والسلام کو کی ذات ہے آپ کا یہ بلند مقام ہے کہ آپ کے اندر نبیوں کا ذخیرہ آیا ہے اور ادھر رسولوں کے تحت کی پیشگوئی پوری ہوئی ہے یہ زمانہ وہ ہے جس میں اشاعت اسلام کے ذریعہ تمام کو ون جمع ہونا ہے صلی اللہ علیہ وسلم زندہ سے جمیع ہے تمام کاموں کے لیے ہے ساری دنیا کے لیے تو آنے والے وجود کے ذریعہ اشاعت اسلام فری اختتام کو پہنچی انتہا تک پہنچ نہیں ہے چلیے لی وزیرا حوالہ دینا بھول ہی والی پیش گوئی پر سلف نے یہ لکھا ہے کہ غالب کا انداز ہورہی سالہ جمالی حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کی روایت موجود ہے حضرت امام رازی نے اس کا کوڈ کیا ہے یہ آیت جو ہے حضرت ابو ہریرہ کہتے ہیں کہ یہ امام مہدی کے بارے میں تو اس لحاظ سے حضرت مسیح موعودعلیہ الصلوٰۃ والسلام کا یہ فرمانا کہ میں کبھی آدم کبھی موسی کبھی یعقوب و نیز ابراہیم ہونا اس لئے میری بے شمار بالکل برحق ہے اور اس کے علاوہ جو عبارت پڑھ لے اس میں چودہ نبی کا ذکر آتا ہے اور ان کے علاوہ بھی بات جگہ اور نبی حضرت قریشی کا بھی ذکر آتا ہے تو حضرت موسی علیہ السلام کو ہر قوم کے نبی سے مشابہت دی گئی ہے اور آپ کے وجود میں ان کو جمع کیا گیا ہے اور یہ سب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے فیض سے تحصیل آپ کا دوسری باسط ہونے کے لحاظ سے کو یہ مقام ملا ہے وہ آخر روانہ ان الحمد للہ رب العالمین جزاک اللہ دتہ اگلے پروگرام میں ایک نئے طرز کے جواب کے ساتھ آپ کی خدمت میں حاضر ہوں گے اسلام علیکم ورحمتہ اللہ وبراکاتہ صرف دشمن کو کیا ہم نے بہت کام قلم سے دکھایا احمدیہ مسلم جماعت رشتہ ثانیہ کی الہی تحریک

#Islam#Ahmadiyya#TrueIslamCa 𝗢𝗥𝗜𝗚𝗜𝗡𝗔𝗟 𝗦𝗖𝗔𝗡𝗡𝗘𝗗 𝗥𝗘𝗙𝗘𝗥𝗘𝗡𝗖𝗘𝗦 𝗟𝗜𝗡𝗞: https://bit.ly/3gSkGJ0 𝐕𝐈𝐃𝐄𝐎 𝐇𝐈𝐆𝐇𝐋𝐈𝐆𝐇𝐓𝐒 (𝐌𝐈𝐍𝐔𝐓𝐄 𝐂𝐀𝐒𝐓): 00:48 : 𝑸𝒖𝒆𝒔𝒕𝒊𝒐𝒏: 𝑫𝒊𝒅 𝑯𝒂𝒛𝒓𝒂𝒕 𝑴𝒊𝒓𝒛𝒂 𝑺𝒂𝒉𝒊𝒃 𝒊𝒏𝒔𝒖𝒍𝒕 𝒕𝒉𝒆 𝑷𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕𝒔 (𝒂𝒔) 𝒘𝒉𝒆𝒏 𝒉𝒆 𝒄𝒍𝒂𝒊𝒎𝒔 𝒕𝒉𝒂𝒕 𝑨𝒍𝒍𝒂𝒉 𝒕𝒉𝒆 𝑬𝒙𝒂𝒍𝒕𝒆𝒅 𝒉𝒂𝒔 𝒃𝒆𝒔𝒕𝒐𝒘𝒆𝒅 𝒉𝒊𝒎 𝒘𝒊𝒕𝒉 𝒏𝒂𝒎𝒆𝒔 𝒐𝒇 𝒑𝒓𝒆𝒗𝒊𝒐𝒖𝒔 𝒑𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕𝒔 (𝒂𝒔)? 01:50 : 𝑨𝒏𝒔𝒘𝒆𝒓: 𝑷𝒓𝒆𝒔𝒆𝒏𝒕𝒊𝒏𝒈 𝒆𝒙𝒂𝒎𝒑𝒍𝒆𝒔 𝒇𝒓𝒐𝒎 𝒕𝒉𝒆 𝒑𝒐𝒆𝒕𝒊𝒄 𝒗𝒆𝒓𝒔𝒆𝒔 (منظوم کلام) 𝒘𝒉𝒆𝒓𝒆 𝒕𝒉𝒆 𝑷𝒓𝒐𝒎𝒊𝒔𝒆𝒅 𝑴𝒆𝒔𝒔𝒊𝒂𝒉 (𝒂𝒔) 𝒖𝒔𝒆𝒅 𝒕𝒉𝒆 𝒏𝒂𝒎𝒆𝒔 𝒐𝒇 𝒐𝒕𝒉𝒆𝒓 𝑷𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕𝒔 𝒂𝒔 𝒈𝒊𝒗𝒆𝒏 𝒕𝒐 𝒉𝒊𝒎 03:05 : 𝑭𝒊𝒓𝒔𝒕 𝑹𝒆𝒇𝒆𝒓𝒆𝒏𝒄𝒆: 𝑬𝒙𝒄𝒆𝒓𝒑𝒕 𝒇𝒓𝒐𝒎 𝒕𝒉𝒆 𝒘𝒓𝒊𝒕𝒊𝒏𝒈𝒔 𝒐𝒇 𝒕𝒉𝒆 𝑷𝒓𝒐𝒎𝒊𝒔𝒆𝒅 𝑴𝒆𝒔𝒔𝒊𝒂𝒉 (𝒂𝒔) 𝒕𝒂𝒌𝒆𝒏 𝒇𝒓𝒐𝒎 𝒕𝒉𝒆 𝒃𝒐𝒐𝒌 “𝑵𝒂𝒛𝒐𝒐𝒍 𝒂𝒍 𝑴𝒂𝒔𝒔𝒊𝒉” 03:52 : 𝑺𝒆𝒄𝒐𝒏𝒅 𝑹𝒆𝒇𝒆𝒓𝒆𝒏𝒄𝒆: 𝑬𝒙𝒄𝒆𝒓𝒑𝒕 𝒇𝒓𝒐𝒎 𝒕𝒉𝒆 𝒘𝒓𝒊𝒕𝒊𝒏𝒈𝒔 𝒐𝒇 𝒕𝒉𝒆 𝑷𝒓𝒐𝒎𝒊𝒔𝒆𝒅 𝑴𝒆𝒔𝒔𝒊𝒂𝒉 (𝒂𝒔) 𝒕𝒂𝒌𝒆𝒏 𝒇𝒓𝒐𝒎 𝒕𝒉𝒆 𝒃𝒐𝒐𝒌 “𝑯𝒂𝒒𝒊𝒒𝒂𝒕𝒖𝒍 𝑾𝒂𝒉𝒊” 05:35 : 𝑸𝑼𝑹𝑨𝑵𝑰𝑪 𝑷𝑹𝑶𝑶𝑭: 𝑪𝒉𝒂𝒑 𝑨𝒍 𝑴𝒖𝒓𝒔𝒂𝒍𝒂𝒕, 𝑽𝒆𝒓𝒔𝒆 12: “𝑨𝒏𝒅 𝒘𝒉𝒆𝒏 𝒕𝒉𝒆 𝑴𝒆𝒔𝒔𝒆𝒏𝒈𝒆𝒓𝒔 𝒂𝒓𝒆 𝒎𝒂𝒅𝒆 𝒕𝒐 𝒂𝒑𝒑𝒆𝒂𝒓 𝒂𝒕 𝒕𝒉𝒆 𝒂𝒑𝒑𝒐𝒊𝒏𝒕𝒆𝒅 𝒕𝒊𝒎𝒆.” 06:03 : 𝑸𝑼𝑹𝑨𝑵𝑰𝑪 𝑷𝑹𝑶𝑶𝑭 – 02 : 𝑪𝒉𝒂𝒑 𝑨𝒍 𝑱𝒖𝒎’𝒂, 𝑽𝒆𝒓𝒔𝒆 4: “𝑨𝒏𝒅 𝒂𝒎𝒐𝒏𝒈 𝒐𝒕𝒉𝒆𝒓𝒔 𝒇𝒓𝒐𝒎 𝒂𝒎𝒐𝒏𝒈 𝒕𝒉𝒆𝒎 𝒘𝒉𝒐 𝒉𝒂𝒗𝒆 𝒏𝒐𝒕 𝒚𝒆𝒕 𝒋𝒐𝒊𝒏𝒆𝒅 𝒕𝒉𝒆𝒎. 𝑯𝒆 𝒊𝒔 𝒕𝒉𝒆 𝑴𝒊𝒈𝒉𝒕𝒚, 𝒕𝒉𝒆 𝑾𝒊𝒔𝒆.” 06: 30 : 3 𝑰𝒎𝒑𝒐𝒓𝒕𝒂𝒏𝒕 𝑹𝒆𝒇𝒆𝒓𝒆𝒏𝒄𝒆𝒔: 𝑷𝒓𝒐𝒎𝒊𝒏𝒆𝒏𝒕 𝑺𝒂𝒊𝒏𝒕𝒔 𝒍𝒊𝒌𝒆 𝑺𝒉𝒆𝒊𝒌𝒉 𝑨𝒃𝒅𝒖𝒍 𝑸𝒂𝒅𝒊𝒓 𝑱𝒊𝒍𝒂𝒏𝒊 (𝒓𝒂); 𝑯𝒂𝒛𝒓𝒂𝒕 𝑺𝒉𝒂𝒎𝒔 𝑻𝒂𝒃𝒓𝒆𝒛𝒊 𝒂𝒏𝒅 𝑯𝒂𝒛𝒓𝒂𝒕 𝑩𝒂 𝒀𝒂𝒛𝒊𝒅 𝑩𝒊𝒔𝒕𝒂𝒎𝒊 𝒉𝒂𝒗𝒆 𝒂𝒍𝒔𝒐 𝒖𝒔𝒆𝒅 𝒕𝒉𝒆𝒔𝒆 𝒏𝒂𝒎𝒆𝒔 𝒊𝒏 𝒕𝒉𝒆 𝒑𝒂𝒔𝒕. 𝑰𝒕 𝒊𝒔 𝒂 𝒔𝒑𝒊𝒓𝒊𝒕𝒖𝒂𝒍 𝒔𝒕𝒂𝒕𝒖𝒔 𝒕𝒉𝒂𝒕 𝒕𝒉𝒆 𝒔𝒑𝒊𝒓𝒊𝒕𝒖𝒂𝒍 𝒑𝒆𝒐𝒑𝒍𝒆 𝒖𝒏𝒅𝒆𝒓𝒔𝒕𝒂𝒏𝒅. 07:30 : 𝑯𝑨𝑫𝑰𝑻𝑯 𝑹𝑬𝑭𝑬𝑹𝑬𝑵𝑪𝑬: “𝑼𝒍𝒆𝒎𝒂 𝒐𝒇 𝒎𝒚 𝑼𝒎𝒎𝒂𝒉 𝒘𝒊𝒍𝒍 𝒃𝒆 𝒍𝒊𝒌𝒆 𝒑𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕𝒔 𝒐𝒇 𝑩𝒂𝒏𝒊 𝑰𝒔𝒓𝒂𝒆𝒍” 10:00 : 𝑯𝑨𝑫𝑰𝑻𝑯 𝑹𝑬𝑭𝑬𝑹𝑬𝑵𝑪𝑬 – 02: 𝑺𝒂𝒉𝒊𝒉 𝒂𝒍 𝑴𝒖𝒔𝒍𝒊𝒎: 𝑻𝒉𝒆 𝑯𝒐𝒍𝒚 𝑷𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕 𝑴𝒖𝒉𝒂𝒎𝒎𝒂𝒅 (ﷺ) 𝒂𝒅𝒅𝒓𝒆𝒔𝒔𝒆𝒅 𝒕𝒉𝒆 𝑴𝒆𝒔𝒔𝒊𝒂𝒉 (𝒂𝒔) 𝒘𝒉𝒐 𝒘𝒊𝒍𝒍 𝒄𝒐𝒎𝒆 𝒊𝒏 𝒕𝒉𝒆 𝒍𝒂𝒕𝒆𝒓 𝒅𝒂𝒚𝒔 𝒂𝒔 “𝑷𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕” 𝒇𝒐𝒖𝒓 (4) 𝒕𝒊𝒎𝒆𝒔! 10:40 : 𝑯𝑨𝑫𝑰𝑻𝑯 𝑹𝑬𝑭𝑬𝑹𝑬𝑵𝑪𝑬 – 03: 𝑩𝒂𝒉𝒂𝒓 𝒖𝒍 𝑨𝒏𝒘𝒂𝒓 𝑹𝒆𝒇𝒆𝒓𝒆𝒏𝒄𝒆𝒔: 3 𝑨𝒉𝒂𝒅𝒊𝒕𝒉 𝒘𝒉𝒆𝒓𝒆 𝒕𝒉𝒆 𝑰𝒎𝒂𝒎 𝒖𝒍 𝑸𝒂𝒊𝒎 (𝒂𝒔) (𝑰𝒎𝒂𝒎 𝑴𝒂𝒉𝒅𝒊) 𝒖𝒑𝒐𝒏 𝒉𝒊𝒔 𝒂𝒓𝒓𝒊𝒗𝒂𝒍 𝒘𝒊𝒍𝒍 𝒕𝒆𝒍𝒍 𝒑𝒆𝒐𝒑𝒍𝒆 𝒕𝒐 𝒔𝒆𝒆 𝒉𝒊𝒎 𝒊𝒇 𝒕𝒉𝒆𝒚 𝒘𝒊𝒔𝒉 𝒕𝒐 𝒔𝒆𝒆 𝒂𝒏𝒚 𝑷𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕 𝒊𝒏𝒄𝒍𝒖𝒅𝒊𝒏𝒈 𝒕𝒉𝒆 𝒉𝒐𝒍𝒚 𝑷𝒓𝒐𝒑𝒉𝒆𝒕 𝑴𝒖𝒉𝒂𝒎𝒎𝒂𝒅 (ﷺ)….SHOW LESS

 56 total views,  2 views today

Leave a Reply

%d bloggers like this: